تازہ ترین تحاریر

پہچان انٹرویوز

"نامِ زہرا نے مجھے بخشی ہے معراج عروج” شاعرہ عروج زہرا کا انٹرویو

"نامِ زہرا نے مجھے بخشی ہے معراج عروج" شاعرہ عروج زہرا کا انٹرویو تفکر - آپ کا پورا نام؟ عروج زہرا۔۔عروج زہرا تفکر - قلمی نام؟ عروج زہرا۔۔کوئی نہیں ہے۔زہرا ہی تخلص کرتی ہوں۔ تفکر - کہاں اور کب پیدا ہوئے؟ عروج زہرا۔۔کراچی میں پیدا…

"ہوبہو محبت ہے” نثر نگار اور شاعر محمد نوید اختر مرزا کا انٹرویو

"ہوبہو محبت ہے" نثر نگار اور شاعر محمد نوید اختر مرزا کا انٹرویو تفکر - آپ کا پورا نام؟ نوید مرزا۔۔محمد نوید اختر مرزا تفکر - قلمی نام؟ نوید مرزا۔۔محمد نوید مرزا تفکر - کہاں اور کب پیدا ہوئے؟ نوید مرزا۔۔لاہور 26 فروری 1968 تفکر -تعلیمی…

"کمرے میں ایک میں تھا کوئی دوسرا نہ تھا” شاعر ہارون راعون کا انٹرویو

"کمرے میں ایک میں تھا کوئی دوسرا نہ تھا" شاعر ہارون راعون کا انٹرویو تفکر - آپ کا پورا نام؟ ہارون راعون۔۔ہارون راعون تفکر - قلمی نام؟ ہارون راعون۔۔نہیں کوئی قلمی نام نہیں ہے یہی ہارون راعون ہی استعمال کیا کرتا ہوں۔ تفکر - کہاں اور کب پیدا…

"آج کل پیار جتانے نہیں آتا کوئی” شاعر احسن مجتبٰی کا انٹرویو

"آج کل پیار جتانے نہیں آتا کوئی" شاعر احسن مجتبٰی کا انٹرویو تفکر - آپ کا پورا نام؟ احسن۔۔پورا نام احسن مجتبٰی ہے تفکر - قلمی نام؟ احسن۔۔احسن تخلص کے طور پر استعمال کرتا ہوں تفکر - کہاں اور کب پیدا ہوئے؟ احسن۔۔میں 20 فروری 1994 کو اسلام…

منتخب افسانے

آگہی : فرح بھٹو

اس نے پلکوں پر مسکارے کا آخری کوٹ لگایا اور آئینے سے ذرا دور ہٹ کر خود کو ناقدانہ نگاہوں سے دیکھا کمرے میں قدم…

Stay With Us

نیوز لیٹر

Powered by MailChimp

منتخب غزلیں

کالم

افسانے اور اعمال نامے – ڈاکٹر عمرانہ مشتاق

افسانے اور اعمال نامے ڈاکٹر عمرانہ مشتاق آج کل پانامہ کے حوالے سے سیاستدانوں کے منہ میں جو بات آتی ہے وہ کہے جارہے ہیں اسے کبھی تو پاجامہ بنا دیتے ہیں اور کبھی افسانہ اور اب تو ایسے ایسے نامے سوشل میڈیا پر آرہے ہیں کہ جن کے بارے میں پہلے زمانے میں عشاق لوگ نامہ بروں سے دوستی کر لیتے تھے کہ اُن کے محبوب کا کوئی خط آیا ہے تو جلدی وصول ہوجاتا تھا…
مزید پڑھیں۔۔

پاکستان زندہ باد از سماءچودھری

پاکستان زندہ باد   از سماءچودھری اس کرسی اور طاقت کی ہوس اور روپیہ پیسہ کی سیاست میں پہلے نقصان جو ہوا اور ہو رہا ہے وہ اس ملک کی نایاب اور قیمتی عوام کا ہے ۔ پھر یہ ہوا کہ ہمارے مذہب کو ہر طرح نشانہ بنایا گیا۔  اور بنایا جا رہا ہے اور ہم پھر خاموش کیوں کہ تماشائیوں میں ہماری عوام معصوم اور عقل مند عوام نمبر ون پہ ہے۔ ہم کیوں بولیں بھائی ۔۔ ہمارا…
مزید پڑھیں۔۔

نیوز لیٹر

Powered by MailChimp

عالمی ادب

چاچا فضل دین : دیوندر ستیارتھی

چاچا فضل دین روپم کو مجھ سے محبت ہے نہ کہ میرے گاؤں والوں سے۔ وہ تو میرے ہی کردار سے واقف ہے، میرے ماں باپ اور دور و نزدیک کے بھائی بہنوں سے تو اسے کوئی سروکار نہیں۔ بھلے آدمی نے کبھی بھول کر بھی تو اس بات میں دلچسپی نہیں لی کہ میرے گانو…

فتّوبھوکا ہے : دیوندر ستیارتھی

فتّوبھوکا ہے بھوک مر رہی ہے۔ اب یہ بڑھ تو نہیں سکتی۔ پہلے تو سانپن کی طرح بڑھتی چلی آرہی تھی۔ چولھے میں آگ نظر نہیں آتی۔ آج آگ نہیں جلے گی۔ دو پہر تو کبھی کی ڈھل گئی۔ پتا جی بھوکے ہیں، چاچا بھوکا ہے، ماں بھی ،میں بھی،چھوٹا بھائی بھی…

قصہ ایک رات کا : ڈینیل ووڈریل

پیل ہام ایک رات پہنچا تو اپنے پلنگ کے برابر ایک ننگ دھڑنگ آدمی کوغراتے پایا۔ کمرے میں روشنی کم تھی لیکن اس کی آنکھوں نے پھر بھی کاندھے سے کلائی تک اس آدمی کا ایک بازو، کسی جلتی شے کا گوندا ہوا نشان، ذرا سے باہر کو ابھرے دانتوں کی سرسری جھلک…

سنگ صبور : عتیق رحیمی

تعارف کابل کے ایک سینئر پبلک سرونٹ کے گھر میں 1962 میں جنمے عتیق رحیمی کی ابتدائی تعلیم ’لیسے استقلال‘ میں ہوئی۔ افغا نستان میں سوویت روس کی مداخلت کے بعد انھیں ایک سال کے لیے پاکستان میں پناہ لینی پڑی، اور پھر 1985 میں انھیں فرانس میں…