آورد . دھیان کا جب بھی کوئی پٹ کھولا "میری بات نہ کہہ” دل بولا دل کی بات کہی بھی…

آورد
.
دھیان کا جب بھی کوئی پٹ کھولا
"میری بات نہ کہہ” دل بولا
دل کی بات کہی بھی نہ جائے
ضبط کی ٹیس سہی بھی نہ جائے
نظم میں کس کا ذکر کروں اب
فکر میں ہوں کیا فکر کروں اب
ایک عجیب الجھن میں گھرا ہوں
کیا سوچوں، یہ سوچ رہا ہوں
.
مجید امجد

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

تبصرے بند ہیں.

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…