میری دُعا ہے خلا کے گہرے سمندروں میں اگر کہیں کوئی ہے جزیرہ جہاں کوئی سانس لے ر…

میری دُعا ہے

خلا کے گہرے سمندروں میں
اگر کہیں کوئی ہے جزیرہ
جہاں کوئی سانس لے رہا ہے
جہاں کوئی دل دھڑک رہا ہے
جہاں ذہانت نے علم کا جام پی لیا ہے
جہاں کے باسی
خلا کے گہرے سمندروں میں
اُتارنے کو ہیں اپنے بَیڑے
تلاش کرنے کوئی جزیرہ
جہاں کوئی سانس لے رہا ہے
جہاں کوئی دل دھڑک رہا ہے
مری دعا ہے
کہ اس جزیرے میں رہنے والوں کے جسم کا رنگ
اس جزیرے کے رہنے والوں کے جسم کے جتنے رنگ ہیں
ان سے مختلف ہو
بدن کی ہیئت بھی مختلف
اور مشکل و صورت بھی مختلف ہو
مری دعا ہے
اگر ہے اُن کا بھی کوئی مذہب
تو اس جزیرے کو مذہبوں سے وہ مختلف ہو
مری دعا ہے
کہ اس جزیرے کی سب زبانوں سے مختلف ہو زبان اُن کی
مری دعا ہے
خلا کے گہرے سمندروں سے گزر کے
اِک دن
اس اجنبی نسل کے جہازی
خلائی بیڑے میں
اس جزیرے تک آئیں
ہم اُنکے میزباں ہوں
ہم اُن کو حیرت سے دیکھتے ہوں
وہ پاس آ کر
ہمیں اِشاروں سے یہ بتائیں
کہ اُن سے ہم اتنے مختلف ہیں
کہ اُن کو لگتا ہے
اس جزیرے کے رہنے والے
سب ایک سے ہیں
مری دعا ہے
کہ اس جزیرے کے رہنے والے
اُس اجنبی نسل کے کہے کا یقین کر لیں

جاوید اختر

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

تبصرے بند ہیں.

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…