عین ممکن ہے کسی روز قیامت کر دیں کیا خبر ہم ت…

عین ممکن ہے کسی روز قیامت کر دیں
کیا خبر ہم تجھے دیکھیں تو بغاوت کر دیں

مونسِ غم ہے ہمارا، سو کہاں ممکن ہے
تجھ کو دیکھیں تو ترے ہجر کو رخصت کر دیں

پیش گوئی کسی انجام کی جب ملتی ہے
زندگی!! کیسے تجھے وقفِ محبت کر دیں

اس کو احساسِ ندامت ہے تو پھر لوٹ آئے
شاید اس بار بھی ہم اس سے رعایت کر دیں

صوفئ عشق کی مسند مرے ہاتھ آ جائے
میرے احباب اگر مجھ کو ملامت کر دیں

موسم- ہجر بھی ہنس دیتا ہے جس وقت تری
یاد کے پھول خیالوں سے شرارت کر دیں

آخری بار اسے اس لیے دیکھا شاید–!!
اس کی آنکھیں مری الجھن کی وضاحت کر دیں

(شگفتہ الطاف)

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…