سوچ نگر کے شاعراے۔ایم ملک۔ کا انٹرویو

سوچ نگر کے شاعراے۔ایم ملک۔ کا انٹرویو

تفکر – آپ کا پورا نام؟
اے۔ایم ملک۔۔ابن آدم ہوں ،پہچان کے لیے نام عبدالماجد ملک ہے ،نادرہ والے "ملک”لکھنا بھول گئے ،اس لیے قومی کارڈ پر عبدالماجد ہے ،ایک دوست کی خواہش بلکہ فرمائش پر ان دنوں صرف "اے۔ایم ملک”لکھتا ہوں۔
تفکر – قلمی نام؟
اے۔ایم ملک۔۔سکول کے زمانے میں "آزاد”لکھا کرتا تھا مگر جب باقاعدہ لکھنا شروع کیا تو صرف اپنے اصل نام کو ہی اپنی پہچان بنانے کی کوشش کی۔
تفکر – کہاں اور کب پیدا ہوئے؟
اے۔ایم ملک۔۔پیدائش کا ضلع قصور ہے اور جہاں تک سوال کا دوسرا حصہ ہے تو پھر مجھے اپنی اصل بتاتے ہوئے یہ اعتراف کرنا پڑے گا کہ میں اب تیس سال کا نہیں رہا کیونکہ پیدائش کا سال انیس سو چھیاسی ہے۔
تفکر – تعلیمی قابلیت؟
اے۔ایم ملک۔۔نصابی تعلیم کچھ خاص نہیں ،گریجوایشن کے آخری سال دماغ نے تیاری نہیں کی اور دل امتحانی ہال میں بیٹھنے پر آمادہ نہ ہوا ،اسی وجہ سے امتحان نہ دے سکا
تفکر – ابتدائی تعلیم کہاں سے حاصل کی؟
اے۔ایم ملک۔۔اں کی گود سے اللہ اللہ کرنا سیکھا ،باپ کی ڈانٹ ڈپٹ سے کلمہ نماز پڑھنا شروع کیا اور اپنے گاؤں جو کہ ضلع میانوالی میں موجود ہے وہیں کے سرکاری سکول سے ابتدائی تعلیم کا سلسلہ شروع کیا۔
تفکر – اعلی تعلیم کہاں سے حاصل کی؟
اے۔ایم ملک۔۔اتنا "اعلیٰ”دماغ نہیں تھا کہ اعلیٰ تعلیم حاصل کرتا ،جوتیاں گھسیٹتا بمشکل بی ۔اے تک پہنچا اور اسے ادھورا چھوڑ کر غم روزگار میں مصروف ہو گیا۔

تفکر – پیشہ؟

اے۔ایم ملک۔۔مزدور ہوں ،کبھی کسی آفس میں نوکری کی تو کبھی کسی آفس کو اپنا عارضی ٹھکانہ بنایا ،شروع سے ہیوی ٹرانسپورٹ فیلڈ میں ہوں ،اس لیے کہہ سکتا ہوں اس کام کا کافی تجربہ ہے۔

تفکر –ادبی سفر کا اآغاز کب ہوا؟

اے۔ایم ملک۔۔ادبی سفر کی شروعات سکول کے زمانے سے کر دی تھیں، آڑھی ترچھی لائنیں کھینچتا رہتا تھا مگر اس میں باقاعدگی دوہزار سات میں آئی۔
تفکر – آپ نظم یا غزل میں کس سے متاثر ہوئے؟
اے۔ایم ملک۔۔ویسے تو سبھی شعراء اچھے لگتے ہیں مگر سب سے زیادہ پسندیدہ حضرت اقبال اور غالب ہیں ۔
تفکر – ادب کی کون سی صنف زیادہ پسند ہے؟
اے۔ایم ملک۔۔غزل ،نظم
تفکر – ادب کی کس صنف میں زیادہ کام کیا؟

اے۔ایم ملک۔۔غزل اور نثریہ میں۔

تفکر – اب تک کتنی تصانیف شائع ہو چکی ہیں؟

اے۔ایم ملک۔۔ابھی اس حوالے سے شاید سست ہوں ایک بھی تخلیق منظر عام پر نہیں آ سکی مگر اس برس میں شاعری کی پہلی تصنیف پبلش کروانے کا ارادہ ہے۔

نثری تصانیف  ابھی تک ایک ہی ہے جو کہ "سوچ نگر”کے نام سے منظر عام پر آ چکی ہے

تفکر – اپنے خاندان کے حوالے سے کچھ بتائیں؟
اے۔ایم ملک۔۔میرے خاندان کا تعلق میانوالی سے ہے،اعوان ہیں۔

تفکر – ازدواجی حیثیت؟
اے۔ایم ملک۔۔صرف "ایک” ہی شادی کی ہے۔

تفکر – فیملی ممبرز کے بارے میں بتائیے؟
اے۔ایم ملک۔۔جس طرح میرا حلقہ یاراں وسیع ہے اسی طرح میرا خاندان بھی کافی بڑا ہے ،جس میں ہم پانچ بھائی،ایک بہن ،میرے والدین ،اور میری فیملی شامل ہیں،جس میں ایک بیگم اور میرے دو بچے شامل ہیں ۔
تفکر – آج کل کہاں رہائش پذیر ہیں؟
اے۔ایم ملک۔۔ ان دنوں شہر لاہور میں مسکن ہے۔
تفکر – بچپن کی کوئی خوبصورت یاد؟
اے۔ایم ملک۔۔خوبصورت یادیں کافی ہیں ،ان میں سے ایک واقعہ آج بھی یاد ہے جب عمران خان ورلڈکپ جیتنے کے بعد پوری قوم کا ہیرو تھا ،اور ہر بچے کی خواہش تھی کہ اس سے ملاقات ہو تو میری اس سے اس وقت ملاقات ہوئی تھی جب میں پرائمری کا طالبعلم تھا۔
تفکر – ادبی سفر کے دوران میں کوئی خوبصورت واقعہ؟
اے۔ایم ملک۔۔ایک بڑا دلچسپ واقعہ ہے ،ایک کتاب کی پلاک میں تقریب رونمائی تھی ،جناب انتظار حسین صاحب کی صدارت تھی ،میں نوارد کالم نگار تھا مگر خود کو بڑی پھنے خان قسم کی چیز سمجھتا تھا،تقریب میں تھوڑی تاخیر تھی ،انتظار صاحب میرے ساتھ تشریف رکھتے تھے،ان سے شناسائی بھی نہیں تھی بلکہ ان سے ناآشنا تھا،مجھ سے پوچھا کہ آپ کیا کرتے ہو ؟بڑے فخر بلکہ تھوڑا غرور سے کہا کہ میں ایک اخبار میں کالم لکھتا ہوں ،انہوں نے شاباش دی ،جوابی سوال کرنا میں نے ضروری سمجھا اور پوچھا کہ آپ کیا کرتے ہیں ،انہوں نے انکساری سے جواب دیتے ہوئے کہا کہ میں بھی لکھنے کی کوشش کرتا رہتا ہوں،بعد میں جب میں ان کی ذات سے آشنا ہوئی تو ہنسی کے ساتھ پشیمانی بھی ہوتی کہ کیسے خوبصورت لوگ ہمارے درمیان موجود تھے۔

تفکر – ادب میں کن سے متاثر ہیں؟

اے۔ایم ملک۔۔شروع میں نسیم حجازی کو پسند کرتا تھا،پھر سفر ناموں میں مستنصر حسین تارڑ پسندیدہ بنے،ناول نگاری میں عمیرہ احمد،ہاشم ندیم اور ناصر ملک فیورٹ رہے،مگر آج کل مفتی گھرانہ میرے حواسوں پہ سوار ہے ۔

تفکر – ادبی رسائل سے وابستگی؟

اے۔ایم ملک۔۔ یہ وابستگی تو شروع سے رہی ہے اور مختلف اوقات میں مختلف اخبار و رسائل کے ساتھ وابستہ رہا ہوں مگر اب مصروفیات کے ساتھ ساتھ یہ وابستگی دم توڑ رہی ہے بلکہ یہ کہہ سکتا ہوں کہ میں ان سے دور جانے کی کوشش کرتا ہوں مگر بمثل کمبل جا نہیں سکتا۔
تفکر – ادبی گروپ بندیوں اور مخالفت کا سامنا ہوا؟
اے۔ایم ملک۔۔سب کو قبول ہے قبول ہے کہتا رہتا ہوں ،سب تخلیق کار معزز ہیں ،اس لیے کبھی ایسا واسطہ نہیں پڑا۔
تفکر – ادب کے حوالے سے حکومتی پالیسی سے مطمئن ہیں؟
اے۔ایم ملک۔۔کچھ خاص نہیں جس طرح حکومت کو اس میدان میں کام کرنا تھا اس کا ایک فیصد بھی نہیں ہو رہا۔
تفکر – اردو ادب سے وابستہ لوگوں کے لئیے کوئی پیغام؟
اے۔ایم ملک۔۔دب سے وابستہ لوگ عظیم ہیں ،وہ گروپ بندیوں سے دور رہیں ایک دوسرے کے قد کو تسلیم کریں ۔
تفکر – ہماری اس کاوش پر کچھ کہنا چاہیں گے؟
اے۔ایم ملک۔۔ہ تفکر ڈاٹ کام کا بڑا خوبصورت اقدام ہے ،اس سلسلے کو جاری رکھئے تاکہ ہم کافی شخصیات کے بارے جان سکیں۔
تفکر – پہچان شعر یا تحریر؟

اے۔ایم ملک۔۔

ہر شجر ذرد ہونے لگا ہے
دل کو پھر درد ہونے لگا ہے
جذبات ابھی گرم ہیں لیکن
بخت بھی سرد ہونے لگا ہے
S N 13

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…