گورنمنٹ کالج برائے خواتین شاہ رکن عالم کالونی ملتان میں یوتھ فیسٹیول کے سلسلہ کے ڈویژن سطح کے مقابلہ حسن قرأت و نعت خوانی کا انعقاد

بسم اللہ الرحمان الرحیم

14اپریل2017 کووزیر اعلیٰ علمی وادبی پروگرام یوتھ فیسٹیول کے سلسلہ میں ڈویژن سطح کے مقابلہ حسن قرأت ونعت خوانی کا انعقاد کیا گیا جس میں ضلعی سطح کے حسن قرأت ونعت خوانی کے مقابلوں میں اول پوزیشن حاصل کرنے والی طالبات کے مابین ڈویژن سطح کے مقابلوں کا انعقاد کیا گیا۔منصفین کے فرائض محکمہ اوقاف سے محترم قاری محمد ہارون ہاشمی صاحب،محترم قاری منیر چشتی صاحب،محترم قاری محمد سعیدسرورصاحب نے انجام دئے۔مقابلہ حسن قرأت میں ضلع خانیوال سے شہناز اشرف گرلز کالج میاں چنوں،ضلع ملتان سے عالیہ بی بی گرلز کالج شاہ رکن عالم کالونی،ضلع وہاڑی سے ثمینہ نعیم گرلز کالج بورے والا نے شرکت کی ،مقابلہ نعت خوانی میں ضلع خانیوال سے نعیم النساء گرلز کالج خانیوال،ضلع وہاڑی سے ثناء صفدر گرلز کالج ٹبہ سلطان پور،ضلع ملتان سے حافظہ نائلہ عمر گرلز کالج شاہ رکن عالم کالونی ملتان نے حصہ لیا۔ ایک طویل انتظار اور بار بار رابطے کے باوجودضلع لودھراں سے طالبات حافظہ سنبل شہزادی اورسعدیہ رفیق مقابلوں میں شرکت کے لئے نہیں پہنچیں تو پھر تین تین طالبات کے درمیان ہی مقابلہ کروانا پڑا۔
طالبات نے مندرجہ ذیل نعتیں پڑھیں:

  • نعیم النساء:

؎ میرے مصطفیٰ کا ہم سر نہ ہوا،نہ ہے،نہ ہوگا
کوئی اور ان سے بہتر نہ ہوا، نہ ہے،نہ ہوگا

  • ثناء صفدر :

؎ خوشبو ہے دوعالم میں تیری اے گل چیدہ
کس منہ سے بیاں ہوں تیرے اوصاف حمیدہ

  • حفظہ نائلہ عمر:

؎ محمد مصطفیٰ پیارے،سنہری جالیوں والے
منصفین کرام کے فیصلے کے مطابق مقابلہ حسن قرأت میں عالیہ بی بی گرلز کالج شاہ رکن عالم کالونی ملتان نے اول،شہناز اشرف گرلز کالج میاں چنوں نے دوم اور ثمینہ نعیم گرلز کالج بورے والا نے سوم پوزیشن حاصل کی۔مقابلہ نعت خوانی میں نعیم النساء گرلز کالج خانیوال نے اول،ثناء صفدر گرلز کالج ٹبہ سلطان پور نے دوم اور حافظہ نائلہ عمر گرلز کالج شاہ رکن عالم کالونی نے سوم پوزیشن حاصل کی۔

قواعد وضوابط کے مطابق حسن قرأت میں اول آنے والی طالبہ عالیہ بی بی ملتان اور نعت خوانی میں اول آنے والی طالبہ نعیم النساء خانیوال اب صوبائی سطح کے مقابلوں میں شرکت کریں گی۔
منصفین کرام نے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے پوزیشن حاصل کرنے والی طالبات کو مبارک باد دی اور کہا کہ نعت خوانی ایک بہت بڑی سعادت ہے ۔نعت خوانوں کو ہر بار ایک ہی نعت کی بجائے نئی نئی نعتیں پیش کرنے کی کوشش کرنی چاہئے۔
اس کے ساتھ ہی حسن قرأت و نعت خوانی کی یہ بابرکت محفل اپنے اختتام کو پہنچی۔کیونکہ تینوں طالبات نے پوزیشن حاصل کی تھی اس لئے وہ کھلتے چہروں کے ساتھ اپنے اپنے گھروں کو روانہ ہوئیں۔

رضیہ رحمان

جواب چھوڑیں