آنس معین کا یومِ ولادت آنس معین 29 نومبر 1960 کو ل…

آنس معین کا یومِ ولادت
آنس معین 29 نومبر 1960 کو لاہور میں پیدا ہوئے۔ اُن کا تعلق ایک مذہبی گھرانے سے تھا۔اُن کا رحجان صوفی ازم کی طرف زیادہ تھا۔ کہیں سے نہیں لگتا تھا کہ وہ خودکشی کر سکتے ہیں۔اُن کی خودکشی سےمتعلق کئی وجوہات بیان کی جاتی ہیں۔ پہلی یہ کہ اُن کے ایک صوفی دوست نے کہا، موت کے بعد زندگی اتنی خوبصورت ہے کہ اگر لوگوں کو پتہ چل جائے تو دنیا کی آدھی آبادی خودکشی کر لے۔ دوسری یہ کہ وہ اپنی کولیگ سے شادی کرنا چاہتے تھے مگر خاندان والوں نے اس رشتے سے منع کر دیا۔ تیسری وجہ یہ بیان کی جاتی ہے کہ جس بنک میں وہ کام کرتے تھے وہاں ایک فراڈ ہوا اور انچارج کے طور پر وہ خود کو اس کا ذمہ دار سمجھ رہے تھے۔ان تمام حالات نے انہیں خودکشی پر مجبور کر دیا۔ انہوں نے 5 فروری 1985 کو ملتان میں ٹرین کے نیچے آ کر خودکشی کر لی۔
*نہ تھی زمین میں وسعت مری نظر جیسی*
*بدن تھکا بھی نہیں اور سفر تمام ہوا*
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
آنس معین چھوٹی عمرکااتنابڑاشاعرنکلا کہ اس کی قدوقامت کاجائزہ لینے کے لیےگردن اٹھاکردیکھناپڑے تواپنی دستارضرورسنبھالنی پڑتی ہے۔(طفیل ہوشیارپوری،اظہاریہ،آنس معین نمبر،محفل،ستمبر 1979،لاہور) –
اس کے اشعارجدیدشاعری پر اثرات مرتب کررہے ہیں۔
(تنویر صہبائی، گہراب،گوشہ ٔ آنس معین) –
اگروہ چندبرس اور زندہ رہ جاتاتومجھے یقیں ہے کہ اس کاادبی مرتبہ کیٹس سے کم نہ ہوتا۔
(ڈاکٹر وزیر آغا، آنس معین نمبر،محفل،ستمبر 1979،لاہور)
میں اپنی ذات کی تنہائی میں مقید تھا
پھر اس چٹان میں اک پھول نے شگاف کیا
آنس معین


جواب چھوڑیں