تمہارے دِل کو میں اپنے حق میں ابھی مناوں، کہو تو آ…

تمہارے دِل کو میں اپنے حق میں ابھی مناوں، کہو تو آؤں؟
محبتوں کے رفاقتوں کے دیے جلاؤں کہو تو آؤں؟

جو دو اجازت تو میرے ہمدم وفا کا روشن ستارا بن کر
تمہاری دنیا کے آسمانوں پہ جگمگاؤں کہو تو آؤں؟

زمانہ کافر کہے تو کہہ دے، کِسے ہے پرواہ ؟خیال کِس کو؟
تمہارے قدموں میں سر کو اپنے ابھی جھکاؤں؟ کہو تو آؤں؟

تو ساتھ ہو تو نگاہِ عالم کی فکر کیوں ہو ؟خیال کیونکر؟
جہاں ملیں ہم جہان بھر کو وہیں بلاؤں؟ کہو تو آؤں؟

ادا ہوں الفاظ میرے ہونٹوں سے تیرے دل کے تمام ہمدم
میں معجزے سارے عشق والے ابھی دکھاؤں؟کہو تو آؤں؟

بہک رہی ہیں خمارِ اُلفت سے دم بدم جو ہماری آنکھیں
میں اِن نگاہوں کی مستیاں سب تمہیں پلاؤں؟کہو تو آؤں؟

تمہارے ہی نام کر کے منسوب ذات اپنی کے سب حوالے
میں اپنے اندر کی فاخرہ کو ہی بھول جاؤں؟کہو تو آؤں؟

(فاخرہ انجم)

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…