کبھی جو پُرسشِ حالات ہوگئی ہوگی خُدا گواہ کہ …

کبھی جو پُرسشِ حالات ہوگئی ہوگی
خُدا گواہ کہ برسات ہوگئی ہوگی

جو راہِ شوق میں حائل تھے فاصلے تو کیا!
نظر نظر میں ملاقات ہوگئی ہوگی

ہوا آپ کی زلفیں بکھر گئی ہوں گی
فضا میں بارشِ ظلمات ہوگئی ہوگی

کسی نے شرم سے چہرہ چھپا لیا ہوگا
نگاہ محوِ جمالات ہوگئی ہوگی

وہ اجنبی کی طرح پیش آئے ہوں گے شکیب
جو راستے میں ملاقات ہوگئی ہوگی

شکیب جلالی

از:-کُلّیاتِ شکیب جلالی ص ۴۱۹

انتخاب
سفیدپوش

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…