پہلے کہا نہیں تھا کہ چاہا نہ کر مجھے اَب گ…

پہلے کہا نہیں تھا کہ چاہا نہ کر مجھے
اَب گھر کے آئینے سے تو پوچھا نہ کر مجھے

کب تک بُنے گا ذہن میں لفظوں کے دائرے
میں مسئلہ نہیں ہُوں تو سَوچا نہ کر مجھے

سائے گلی میں جاگتے رہتے ہیں رات بھر
تنہائیوں کی اَوٹ سے جھانکا نہ کر مجھے

پھیلے گی تیرے ہاتھ کی خوشبو بھی اس کے ساتھ
پاگل ہَوا کے دوش پہ لِکھا نہ کر مجھے

ایسا نہ ہو کہ تجھ سے بچھڑ جاؤں میں سلیم
تنہا کسی مقام پہ چھوڑا نہ کر مجھے

سلیم کوثر
(جون/۱۹۷۳ء)

از:-جنہیں راستے میں خبر ہوئی (کُلّیاتِ سلیم) ص ۱۵۴

انتخاب
سفیدپوش

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…