آھٹ سی کوئی آئے تو لگتا ھے کہ تم ھو سایہ کوئی لہرا…

آھٹ سی کوئی آئے تو لگتا ھے کہ تم ھو
سایہ کوئی لہرائے , تو لگتا ھے کہ تم ھو

جب شاخ کوئی ھاتھ لگاتے ھی چمن میں
شرمائے لچک جائے , تو لگتا ھے کہ تم ھو

صندل سے مہکتی ھُوئی پر کیف ھَوا کا
جھونکا کوئی ٹکرائے , تو لگتا ھے کہ تم ھو

اوڑھے ھُوئے تاروں کی چمکتی ھُوئی چادر
ندی کوئی بل کھائے , تو لگتا ھے کہ تم ھو

جب رات گئے کوئی کرن میرے برابر
چپ چاپ سے سو جائے , تو لگتا ھے کہ تم ھو

"جاں نثار اختر”


بشکریہ
https://www.facebook.com/Inside.the.coffee.house

جواب چھوڑیں