آ گئی یاد ، شام ڈھلتے ھی بجھ گیا دل ، چراغ جلتے ھ…

آ گئی یاد ، شام ڈھلتے ھی
بجھ گیا دل ، چراغ جلتے ھی

کھل گئے شہر غم کے دروازے
اک ذرا سی ھوا کے چلتے ھی

کون تھا تُو ، کہ پھر نہ دیکھا تجھے ؟؟
مٹ گیا خواب ، آنکھ مَلتے ھی

خوف آتا ھے اپنے ھی گھر سے
ماہِ شبِ تاب کے نکلتے ھی

تُو بھی جیسے بدل سا جاتا ھے
عکسِ دیوار کے بدلتے ھی

خُون سا لگ گیا ھے ھاتھوں میں
چڑھ گیا زھر ، گل مَسلتے ھی

”منیر نیازی“


بشکریہ
https://www.facebook.com/Inside.the.coffee.house

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…