جب بھی موسم ہُنرِ حرف و بیاں لے جائے یُوں…

جب بھی موسم ہُنرِ حرف و بیاں لے جائے
یُوں لگے جسم سے جیسے کوئی جاں لے جائے

ہم کہ ہیں نقشِ سرِ ریگِ رواں کیا جانے
کب کوئی موجِ ہوا اپنا نشاں لے جائے

ایک آذادی کہ خود کھینچ لیں خواہش کے حصار
اِک اسیری کہ کراں تابہ کراں لے جائے

وحشتِ شوق مقدر تھی سو بچتے کب تک
اب تو یہ سیلِ بلا خیز جہاں لے جائے

ایک پرچھائیں کے پیچھے ہیں ازل سے عالیؔ
یہ تعاقب ہمیں کیا جانے کہا‍ں لے جائے

جلیل عالیؔ

المرسل‌: فیصل خورشید


Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

شئیر کریں
3 تبصرے
  1. اردو کلاسک کہتے ہیں

    Jalil Aali

  2. گمنام کہتے ہیں

    Buhat khub👌

  3. گمنام کہتے ہیں

    Zabardast

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…