ہدیۂ نعت بخدمتِ اقدس رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ…

ہدیۂ نعت بخدمتِ اقدس رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم
کلام : شمسہ نجم

ہےجن سے قائم، یہ نظمِ عالم، درور اُن پر، سلام اُن پر
جو دین کا اک، ستُونِ محکم، درور اُن پر، سلام اُن پر

نصیب دیدار آپ کا ہو، ہو خواب میں بھی، ہو حشر میں بھی
حیات میں سب سے جو مقدم، درور اُن پر، سلام اُن پر

نہیں کوئی شک، کہ ان کی خاطر، ہوئی ہے تخلیق دو جہاں کی
اُنہی کی خاطر بنے ہیں عالم، درور اُن پر، سلام اُن پر

سبھی کی خاطر، سراپا شفقت، وہ عاصیوں کے لیے ہیں رحمت
کرم کی تصویر جو مجسم، درور اُن پر، سلام اُن پر

اصول جینے کے یوں سکھائے حیات کے راز کھول ڈالے
بتا گئے رازِ خُلد و آدم، درور اُن پر، سلام اُن پر

حیات کیا ہے بتا گئے وہ، ہمیں تو سب کچھ سکھا گئے وہ
سو جن کے دم سے نہیں کوئی غم، درور اُن پر، سلام اُن پر

چمکتا سورج یہ ماہ و انجم، مدار میں، شمسہ، گھومتے ہیں
طفیل جن کے ہیں سب یہ باہم، درور اُن پر، سلام اُن پر


جواب چھوڑیں