تمھیں بھی یاد ہے کچھ، یہ کلام کس کا تھا؟ #خوبصورت_…

تمھیں بھی یاد ہے کچھ، یہ کلام کس کا تھا؟ #خوبصورت_مقطعے
پارٹ 2
……
عمر جاوید کی دعا کرتے
فیض اتنے وہ کب ہمارے تھے
فیض
….
اے ولی دردِ سر کبھو نہ رہے
جب ملے صندل و گلابِ سخن
(ولی دکنی)
…..
میر عمداً بھی کوئی مرتا ہے
جان ہے تو جہان ہے پیارے
….
دل بھی اے درد قطرۂ خوں تھا
آنسوؤں میں کہیں گرا ہوگا
…..
یک نگہ پر بِکے ہے انشا آج
مفت میں مول اک غلام تو لو
(انشا اللہ خان انشا)
…..
ذوق دنیا ہے مکر کا میداں
نگہ اس کی دغا سے لڑتی ہے
….
زندہ پھرنے کی ہے ہوس حالی
انتہا ہے یہ بے حیائی کی
…..
یہ بڑا عیب مجھ میں ہے اکبر
دل میں جو آئے کہہ گزرتا ہوں
(اکبر الہٰ آبادی)
….
ہو چکا روزِ اوّلیں ہی جگر
جس کو جتنا خراب ہونا تھا
….
مہرباں یہ مزارِ فانی ہے
آپ کا جاں نثار تھا، نہ رہا
….
وقت اب وہ ہے کہ بے وجہ خفا ہو کے حسن
یار جاوے تو خرد ہوش کھسکتے جاویں
(میر حسن)
…..
دل لجاتے ہیں اے ولی میرا
سرو قد جب خرام کرتے ہیں
(ولی دکنی)
…..
زمانے میں کوئی تجھ سا نہیں ہے سیف زباں
رہے گی معرکے میں آتش آبرو تیری
….
میر ان نیم باز آنکھوں میں
ساری مستی شراب کی سی ہے
…..
زور عاشق مزاج ہے کوئی
درد کو قصّہ مختصر دیکھا
…..
مصحفی شب جو چپ تُو بیٹھا تھا
کیا تجھے کچھ ملال تھا کیا تھا
….
کعبے کس منہ سے جاؤ گے غالب
شرم تم کو مگر نہیں آتی
…..
کیوں سنے عرضِ مضطر اے مومن
صنم آخر خدا نہیں ہوتا
…..
جو گزرتے ہیں داغ پر صدمے
آپ بندہ نواز کیا جانیں
…..
وقت اچھا بھی آئے گا ناصر
غم نہ کر زندگی پڑی ہے ابھی
(ناصر کاظمی)
….
بشکریہ اردو محفل
عمر جاوید خان


جواب چھوڑیں