" شاید سائنس فکشن کا سب سے بڑا گناہ یہ ہےکہ ش…

" شاید سائنس فکشن کا سب سے بڑا گناہ یہ ہےکہ شعور اور ذہانت کو گڈ مد کر دیتی ہے۔ نتیجہ یہ ہوتا کہ لوگ غیر ضرور ی طور پر روبوٹس اور انسانوں کے درمیان ممکنہ جنگ پر تشویش میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔ جب کہ در حقیقت ہمیں اس تنازع سے خوفزدہ ہونا چاہیے جو ایلگوریتھم کے سبب طاقتور ہونے والی سپر ہیومین اشرافیہ اور نوع انسانی کی عام اکثریت کے درمیان پیدا ہو رہا ہے۔ ہمیں آرٹیفشل انٹیلجنس کے مستقبل پر توجہ دینی چاہیے۔
درحقیقت آرٹیفشل انٹیلجنس کے بارے میں بننے والی فلمیں حقائق سے بہت دور ہیں۔ دو ہزار پندرہ میں بننے والی فلم ایکس مشینا میں دکھایا گیا ہے کہ ایک آرٹیفشل انٹیلجنس کا ماہر خاتون روبوٹ کی محبت میں گرفتار ہو جاتا ہے۔ حقیقت میں یہ فلم آرٹیفشل انٹیلجنس کے خوف میں مبتلا انسان کی نہیں ہے بلکہ یہ ایک ذہین عورت سے خوفزدہ مرد کی کہانی ہے ، اور یہ کہ کہیں عورت کی آزادی عورت کی حکمرانی میں ڈھل نہ جائے۔ ایسا ممکن ہی کیسے ہے کہ آرٹیفشل انٹیلجنس کی کوئی جنسی شناخت پید ا کی جا سکے؟ اس طرح کا کردار کس طرح روبوٹ سے ادا ہو سکتا ہے ؟ "
Yuval Noah Harari

بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2804109496486232

جواب چھوڑیں