پروفیسر احمد علی کا یومِ پیدائش July 01 , 1910 پ…

پروفیسر احمد علی کا یومِ پیدائش
July 01 , 1910

پروفیسر احمد علی یکم جولائی 1910ء کو دلّی (ہندوستان) کے کوچہ پنڈت میں واقع جلال منزل میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کی ایک نظم ’’فلاور ان دی باسکٹ‘‘گیارہ برس میں لکھی۔جو انھیں آخری وقت تک یاد تھی۔احمدعلی مترجم،نقاد،شاعراور ڈرامانگارکی حیثیت سے بھی اپنی شہرت رکھتے ہیں
انہوں نے اپنی ادبی زندگی کا آغاز افسانہ نگاری سے کیا تھا۔ ان کا ایک افسانہ افسانوں کے مشہور اور متنازع مجموعے انگارے میں بھی شامل تھا۔ یہ وہی افسانوی مجموعہ ہے جس پر بعدازاں پابندی لگادی گئی تھی اور جسے اردو کی ترقی پسند تحریک کے آغاز کے اسباب میں شمار کیا جاتا ہے۔
پروفیسر احمد علی انگریزی کی تصانیف میں ہماری گلی، شعلے اور قید خانہ کے علاوہ انگریزی زبان میں لکھی گئیں Muslim China، Ocean of Night، The Golden Tradition، Twilight in Delhi اور Of Rats and Diplomats کے نام شامل ہیں۔ پروفیسر احمد علی نے قرآن پاک کا انگریزی ترجمہ بھی کیا تھا جو اشاعت پذیر ہوچکا ہے۔ حکومت پاکستان نے انہیں ستارۂ قائداعظم کا اعزاز عطا کیا تھا۔
14 جنوری 1994ء کو انگریزی اور اردو کے ممتاز ادیب، نقاد اور دانشور پروفیسر احمد علی کراچی میں وفات پاگئے۔ وہ کراچی میں گلشن اقبال کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔


جواب چھوڑیں