جہاں دو جانے پہچانے راستے ایک دوسرے سے ملتے ہیں، و…

جہاں دو جانے پہچانے راستے ایک دوسرے سے ملتے ہیں، وہاں ساری دنیا کچھ دیر کے لیے وطن لگنے لگتی ہے۔

(ہَیرمان ہَیسے کے ناول “ڈیمیان” سے اقتباس، جرمن سے اردو ترجمہ: مقبول ملک)

Wo befreundete Wege zusammenlaufen, da sieht die ganze Welt für eine Stunde wie Heimat aus.
(Demian / Hermann Hesse)



بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2835064470057401

جواب چھوڑیں