دوستوں پردرانہ سماج میں جنس کے لحاظ سے مردانہ حاک…

دوستوں پردرانہ سماج میں جنس کے لحاظ سے مردانہ حاکمیت صدیوں سے انسانی تہذیب کا بنیادی حصہ رہی ہے۔انسانی معاشرے میں عورت کو ہمیشہ دوسرے نمبر پر رکھا گیا۔ اسے ہمیشہ جسمانی اور ذہنی طور پر مردوں سے کمزور ثابت کیا گیا۔ اس ضمن میں عورت کی ذہنی تربیت میں کبھی مذہبی تھیوری ز کو استعمال کیا گیا تو کبھی اقتصادی آیڈیالوجی ز کو ، مگر فرانسیسی مفکر سمن ڈ برائے نے انسانی تاریخ کے اس غیر منصفانہ پہلو پر نفسیاتی اور فلسفیانہ انداز میں اس تدبر سے مقدمہ لڑا کہ بیسویں صدی کے اوائل میں مغرب میں عورتوں کے حقوق کے حوالے سے انقلابی تبدیلیاں آئیں ۔ سمن ڈبرایے کو یونہی مادر آف فیمنسسٹ موومنٹ کا لقب نہیں دیا گیا تھا ۔ مغربی سوسائٹی میں عورتوں کی ذہنی بیداری اور تربیت کے عمل کو جاننے کے لیے ‘دی سیکنڈ سیکس’ کا مطالعہ لازم ہے ۔کاش دی سیکنڈ سیکس ہمارے نصاب کا حصہ ہوتی اور ہمارے سماج کی عورت کی آنکھوں کے سامنے سے کچھ پردے گرتے ۔۔۔عامر اختر کی خوبصورت پروڈکشن کے ساتھ دی لائبریری کی نئی قسط حاضر ہے:
Library with Dr Baland Iqbal
Book 12: The second sex by Simon de Beauvoir – Why women kept subordinate in the human society?


بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2938704156360098

جواب چھوڑیں