(ابنِ انشا) فقیر بن کر تم اُن کے در پر ہزار دھونی…

(ابنِ انشا)

فقیر بن کر تم اُن کے در پر ہزار دھونی رما کے بیٹھو
جبیں کے لکھے کو کیا کرو گے، جبیں کا لکھا مٹا کے بیٹھو

اے اُن کی محفل میں آنے والو، اے سود و سودا بتانے والو
جو اُن کی محفل میں آکے بیٹھو تو ساری دنیا بھلا کے بیٹھو

بہت جتاتے ہو چاہ ہم سے، مگر کرو گے نباہ ہم سے؟
ذرا ملاؤ نگاہ ہم سے، ہمارے پہلو میں آکے بیٹھو

جنوں پرانا ہے عاشقوں کا، جو یہ بہانہ ہے عاشقوں کا
تَو اک ٹھکانا ہے عاشقوں کا، حضور جنگل میں جا کے بیٹھو

ہمیں دکھاؤ نہ زرد چہرا، لئے یہ وحشت کی گَرد چہرا
رہے گا تصویر درد چہرا، جو روگ ایسے لگا کے بیٹھو

جنابِ انشاؔ یہ عاشقی ہے، جنابِ انشاء ؔیہ زندگی ہے
جنابِ انشاؔ جو ہے یہی ہے، نہ اِس سے دامن چھڑا کے بیٹھو

(Son of Inshallah)

Become a beggar and sit at their doorstep with thousand Dhoni Rama
What will you do with the writing of Jabin, erase the writing of Jabin and sit

O those who come to their gathering, O those who tell us interest and trade
If you sit in their gathering, forget the whole world.

You tell me a lot of love, but will you fulfill me?
Just look at us, come and sit beside us

Jinn are old for lovers, this is the excuse of lovers
There is a place for lovers, go and sit in the jungle

Show us the yellow face, for this sad face of horror
The picture of the pain of the face will remain, sit with the disease like this

Sir, Insha Allah, this is love, sir, Insha Allah, this is life
Sir, Insha Allah, this is what it is, don't get rid of it.

Translated


جواب چھوڑیں