شورش کاشمیری خطیبِ اعظم(سیّد عطاء اللہ شاہ بخاری …

شورش کاشمیری
خطیبِ اعظم(سیّد عطاء اللہ شاہ بخاری رح)
…..
خطیب اعظم عرب کا نغمہ عجم کی لے میں سنا رہا ہے
سر چمن چہچہا رہا ہے سر وغا مسکرا رہا ہے
حدیث سرو و سمن نچھاور زبان شمشیر اس پہ قرباں
مسیلمہ ایسے جعل سازوں کی بیخ و بنیاد ڈھا رہا ہے
قرون اولی کی رزم گاہوں سے مرتضیٰ کا جلال لے کر
دبیز نیندیں جھنجھوڑتا ہے مجاہدوں کو جگا رہا ہے
ہیں اس کی للکار سے ہراساں محمد مصطفی کے باغی
وفا کے جھنڈے گڑے ہوئے ہیں غنیم پر دندنا رہا ہے
میں اس کے چہرے کی مسکراہٹ سے ایسا محسوس کر رہا ہوں
کہ جیسے کوثر پہ شام ہوتے کوئی دیا جھلملا رہا ہے
وہ مرد درویش جس کو حق نے دئیے ہیں انداز خسروانہ
اسی کی صورت کو تک رہا ہے سفر سے لوٹا ہوا زمانہ
….

Insurgency Kashmiri
Great Speaker (Sayeed Ataullah Shah Bukhari (R.A.)
…..
Khatib Azam is reciting the Arab song for Ajam.
The head of the garden is shaking, the head is smiling.
Hadith, Seman, Nachha and the tongue of the arms are close to it.
Muslim is destroying the foundation of such scammakers.
Taking the glory of Murtaza from the royal places of Qarun Oli
Dubble sleep shakes, awakening the Mujahid.
The rebels of Muhammad Mustafa are harassed by his shout.
The flags of loyalty are hoisted, he is still on Ghanim.
I'm feeling like this with the smile on her face
As if someone is lighting a lamp on Kausar in the evening
The man Darwaish who has been given by the truth, style of Khusroana
The time looted from the journey is looking at his face.
….

Translated


جواب چھوڑیں