اے سالِ گذشتہ ! سن تو ذرا کچھ کام ادھورے باقی ہی…

اے سالِ گذشتہ ! سن تو ذرا
کچھ کام ادھورے باقی ہیں
کچھ دوست پرانے بچھڑ گئے
اور ساتھ ادھورے باقی ہیں
کچھ بوجھل بوجھل یادیں ہیں
جذبات ادھورے باقی ہیں
کچھ غیر مکمل تحریریں
صفحات ادھورے باقی ہیں
کچھ بکھری بکھری تصویریں
لمحات ادھورے باقی ہیں
کچھ آدھی' پونی خوشیاں اور
صدمات ادھورے باقی ہیں
کچھ نظمیں' غزلیں' افسانے
نغمات ادھورے باقی ہیں
اے سالِ گذشتہ ! سن تو ذرا
عنبرین خان

O last year! Just listen to it
Some works are left incomplete
Some old friends got separated
And the togetherness remains incomplete
There are some heavy heavy memories
Emotions remain incomplete
Some unfulfilled writings
The pages are remaining incomplete
Some scattered pictures
Moments remain incomplete
Some half ' pony joys and
The trauma remains incomplete
Some poems, 'Ghazals', myths
Songs are still incomplete
O last year! Just listen to it
Ambrain Khan

Translated


جواب چھوڑیں