ڈاکٹر آذر تمنا کا یومِ ولادت 9 جنوری 1954 ڈاکٹر…

ڈاکٹر آذر تمنا کا یومِ ولادت
9 جنوری 1954

ڈاکٹر آذر تمنا 9 جنوری 1954 ء کو لاہور میں پیدا ہوئے تھے ۔ ان کے والد جناب فضل الٰہی تمنا بھی خوش گو شاعر تھے اور ان کے چھوٹے بھائی یشب تمنا بھی نئی نسل کے ممتاز شعرا میں شمار ہوتے ہیں۔ ڈاکٹر آذر تمنا نے اپنی عملی زندگی کا آغاز ستر کی دہائی میں لاہور سے کیا۔ وہ مختلف اخبارات سے بھی وابستہ رہے۔ انہوں نے سید قاسم محمود کے ادارے 'شاہکار' سے شائع ہونے والے کئی علمی سلسلوں کی ادارت بھی کی۔ اسی کی دہائی میں انھوں نے کچھ وقت کراچی میں بھی گزارا، پھر وہ اسلام آباد منتقل ہو گئے۔ نوے کی دہائی میں وہ آسٹریلیا چلے گئے تھے جہاں انہوں نے بین الاقوامی تعلقات میں پی ایچ ڈی کی سند حاصل کی۔
یکم مارچ 2014 ء کو انہیں دل کا دورہ پڑا جس میں وہ جانبر نہ ہو سکے۔ انہیں اسلام آباد میں سپرد خاک کیا گیا۔
.
یقیں بناتا ہے کوئی گماں بناتا ہے
جو آدمی ہے الگ داستاں بناتا ہے

شکست کرتا ہے زنجیر خانہ و محراب
اور ایک حلقۂ آوارگاں بناتا ہے

گل وجود سے کرتا ہے کسب کوزۂ جاں
خمار سود میں لیکن زیاں بناتا ہے

کمال بے خبری ہے اگر بہم ہو جائے
مگر یہ زیست کو آساں کہاں بناتا ہے

پس چراغ ارادہ کوئی تو ہے آذرؔ
جو میرے شعلۂ دل کو دھواں بناتا ہے

Birthday of Dr. Azar Tamana
January 9, 1954

Dr. Azar Tamana was born on 9 January 1954 in Lahore. His father Mr. Fazal Ulahi Tamana was also a happy poet and his younger brother Yashab Tamana is also one of the prominent poets of the new generation. Dr. Azar Tamana started his practical life in Lahore in the seventies. He also attached various newspapers. He also organised several academic series published from Syed Qasim Mahmood's institute ' Masterpiece '. In the same decade he was in the same decade. Spent some time in Karachi, then he moved to Islamabad. In the ninety s, he went to Australia where he got a PhD certificate in international relations.
He suffered a heart attack on 2014st March 2014 in which he couldn't get Janbar. He was buried in Islamabad.
.
Someone makes faith, someone makes assumptions.
The man who makes a different story

Chains and arch defeat us.
And a circle makes a wanderer

Gal does it from existence.
Hangover in interest but makes loss

It's a wonderful unaware if it's a doubt
But it doesn't make life easy

So, the lamp has some intention, Azhar
The one who makes my heart smoke

Translated


جواب چھوڑیں