مجھے معلوم ہے۔۔ تم نے کبھی کسی کو قتل نہیں کیا اور…

مجھے معلوم ہے۔۔ تم نے کبھی کسی کو قتل نہیں کیا اور نہ کرنا چاہتے ہو۔۔ لیکن میری بات غور سے سنو :

زندگی میں ایسے موڑ بھی آتے ہیں جب اس قسم کی حیلہ سازیوں سے کام نہیں چلتا۔۔ ایسے حالات پیدا ہو جاتے ہیں کہ کوئی شخص یہ دھیان نہیں رکھتا کہ وہ سر پر پڑے کام کے لیے موزوں ہے یا نہیں۔۔ میں چاہتا ہوں کہ تم یہ بات سمجھ لو۔۔ مثال کے طور پر، جنگ میں یہی ہوتا ہے۔۔ تمہیں معلوم ہے کہ جنگ کیا ہوتی ہے۔۔۔؟

" ہاں، مجھے معلوم ہے۔۔ جب ناکاتا پیدا ہوا تھا تو ایک بڑی جنگ ہو رہی تھی۔۔ میں نے اس کی بارے میں سنا ہے۔۔۔ "

" جب جنگ لگتی ہے تو لوگوں کو فوجی بننے پر مجبور کیا جاتا ہے۔۔ وہ بندوقیں تھام کر اگلے مورچوں پر جاتے ہیں اور دوسری طرف کے فوجیوں کو مارتے ہیں، جتنے بھی زیادہ سے زیادہ مار سکیں۔۔ کسی کو پروا نہیں ہوتی کہ تمہیں دوسرے انسانوں کی قتل و غارت پسند ہے یا نہیں۔۔ یہ کام تو بس کرنا پڑتا ہے۔۔ ورنہ تم خود مارے جاتے ہو۔۔"
•••••
ناول : کافکا بر لبِ ساحل
مصنف : ہاروکی موراکامی
مترجم : نجم الدین احمد


بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2983632901867223

جواب چھوڑیں