مہرباں کوئی نظر آئے تو سمجھوں تُو ہے پُھول مہکیں …

مہرباں کوئی نظر آئے تو سمجھوں تُو ہے
پُھول مہکیں تو یہ جانُوں کہ تری خُوشبُو ہے

عقل تسلیم نہیں کرتی پہ دل مانتا ہے
وہ کوئی معجزہ ہے وہم ہے یا جادُو ہے

اب تیرا ذکر کریں گے نہ تُجھے یاد کبھی
ہاں مگر دل کے دھڑکنے پہ کسے قابُو ہے

کچھ مزاج اپنا ہی بیگانہ ہوا جاتا ہے
ورنہ اُس شخص کی تو نرم روی کی خُو ہے

غم رگ و پے میں اُترتا ہے لہُو کی صُورت
درد پلکوں پہ لرزتا ہُوا اِک آنسو ہے

آج کچھ رنگ دِگر ہے مرے گھر کا خالدؔ
سوچتا ہوں میں تیری یاد ہے یا خُود تُو ہے

(خالدؔ شريف)

#Khalid Sharif

نوٹ :-: جناب خالد شریف صاحب کا درج ذیل شعر ہمیشہ کے لیے امر ہو کر ضرب المثل کی حیثیت اختیار کر گیا ہے

بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رُت ہی بدل گئی
اک شخص سارے شہر کو ویران کر

المرسل :-: ابوالحسن علی (ندوی)

If you see someone kind, then understand that you are there.
When flowers bloom, I know that you have a fragrance.

Intelligence does not accept but the heart accepts
Is he a miracle, illusion or magic?

Now I will mention you and never remember you
Yes, but who can control the beat of the heart

Some of our own mood becomes stranger
Otherwise, that person has a soft attitude.

The form of blood descends in the veins of grief.
Pain is a tear trembling on the eyelashes

Today the color of my house is different Khalid
I wonder if I remember you or you

(Khaled ؔ Sharif)

#Khalid Sharif

Note :-: The following poetry of Mr. Khalid Sharif has become the status of multiplication forever.

He left in such a way that the season changed.
One person make the whole city deserted

Marsal :-: Abul Hasan Ali (Nadvi)

Translated

جواب چھوڑیں