Sir Ahmed Imtiaz sahb In the shadows of moon and …

Sir Ahmed Imtiaz sahb
In the shadows of moon and stars
walking on the way to the galaxy
Across the horizon
It seems
The Godess of some lands
descends to conqure our
souls
having the magic of unearthly beauty in her accent
In a golden hour…

Burns many lamps
in the darkness of hearts
soaked in the dew of disappointment..

Brings roses of sleep
for the eyes, burning in sorrow
what the sweet dreams! ….

Jasmine blooms when she speaks
Dimonds shine like true pearls

Her melody touches the heart
when she sings
Seems, in the burning deserts
it rains happily
gusts of cool wind
give peace
The fairies come down
in the wilderness

who's this sarita?
The healer for ill
Let's ask her
From what pleasure of pain
and love fire
God made you
On this melody of your voice
be Holy Gita
live long sarita ….
by
Ahmed Imtiaz

Translated by
Shereen gul

دور افق کے پار کسی نگری کی دیوی
چاند ستاروں کی چھاؤں میں
کاہکشاں کی راہگزر پر
اپنے سروں میں ایک الوہی
حسن کا جادو
کسی سنہری ساعت کے سنگ
لئے ھماری روحوں کو تسخیر کی خاطر آ جاتی ھے
مایوسی کی اوس میں بھیگے
دلوں کی تاریکی میں آ کر
کتنے دئیے جلا جاتی ھے
دکھ کی سیج پہ جلتی أنکھوں میں
نیند کے پھول بچھا جاتی ھے
کیا کیا خواب دکھا جاتی ھے
بات کرے تو اس کے لبوں پر
چنبیلی کی کلیاں چٹخیں
دیکھے تو اس کی آنکھوں میں
ہیرے سچے موتی چمکیں
جب گاے تو اس کے سروں کے رنگ
دلوں میں اتریں
یوں لگتا ھے جیسے جلتے
صحراؤں میں جھوم جھوم کے بادل برسیں
حبس میں خنک ھوا کے جھونکے
راحت آ کر بخشیں
ویرانے میں
پریاں اتریں
بیماروں کے لئے مسیحا
کون ھے یہ ساریتا
اور اب آؤ اس سے پوچھیں
تیری مٹی کو ایشور نے
کونسے درد کی لذت سے
اور پریم اگن سے گوندھا
تیری اس آواز کے سر پر
رھے مقدس گیتا
سدا جیو ساریتا

احمد امتیاز


بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/3014445128786000

جواب چھوڑیں