تم دن کے آفتاب کے سامنے بھی آزاد ہو۔ تم رات کے چا…

تم دن کے آفتاب کے سامنے بھی آزاد ہو۔
تم رات کے چاند تاروں کے سامنے بھی آزاد ہو۔
تم وہاں بھی آزاد ہو،جہاں نہ سورج ہے،نہ چاند تارے۔
بلکہ تم کائنات کی طرف سے آنکھیں بند کر لینے کے بعد بھی آزاد ہو۔
لیکن تم غلامMore ہو،اس شخص کے سامنے جس سے تم،محبت کرتے ہو۔
اس لئے کہ وہ تم سے محبت کرتا ہے۔

اقتباس:کتاب کلیات خلیل جبران

انتخاب و ٹائپنگ:بلاول علی

May be an image of text
بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/3018332315063948

جواب چھوڑیں