( غیر مطبوعہ ) اب کام دعـــــا سے نہیں چلے گا یہ…

( غیر مطبوعہ )

اب کام دعـــــا سے نہیں چلے گا
یہ پھول کسی دشت میں کِھلے گا

دنیا سے بہت احتیــــــــاط کیجے
اِک روز کوئی ورنہ پھانس لے گا

کل راہ کی دــیوار کہہ رہی تھی
اِس بار تجھے راســـــــتا ملے گا

More

جواب چھوڑیں