دلِ فسردہ پہ سو بار تازگی آئی مگر وہ یاد کہ جا کر…

دلِ فسردہ پہ سو بار تازگی آئی
مگر وہ یاد کہ جا کر نہ پھر کبھی آئی

چمن میں کون ہے پُرسانِ حال شبنم کا؟
غریب روئے تو غنچوں کو بھی ہنسی آئی

نویدِ عیش سے بھی لطفِ عیش مل نہ سکا
لباسِ غم ہی میں آئی اگر خوشی آئی

کسی طرح بھی زمانے کو بس میں کر نہ سکے
نہ دوستی، نہ ہمیں راس دشمنی آئی

More

جواب چھوڑیں