تم بھٹک جاؤ تو کچھ ذوق سفر آ جائے گا مختلف رستو…

تم بھٹک جاؤ تو کچھ ذوق سفر آ جائے گا
مختلف رستوں پہ چلنے کا ہنر آ جائے گا

میں خلا میں دیکھتا رہتا ہوں اس امید پر
ایک دن مجھ کو اچانک تو نظر آ جائے گا

تیز اتنا ہی اگر چلنا ہے تنہا جاؤ تم
بات پوری بھی نہ ہوگی اور گھر آ جائے گا

یہ مکاں گرتا ہوا جب چھوڑ جائیں گے مکیں
اک پرندہ بیٹھنے دیوار پر آ جائے گا

More

جواب چھوڑیں