( غیر مطبوعہ ) لباسِ رنگ میں خوش بُو سا جِھلملایا…

( غیر مطبوعہ )

لباسِ رنگ میں خوش بُو سا جِھلملایا ہوا
چراغ لے کے کوئی باغ میں ہے آیا ہوا

مَیں دیکھتا ہوں اندھیرے میں پھول کِھلتے ہوئے
کسی نے آخرِ شب ہے مجھے جگایا ہوا

مجھے بھی لگتا ہے’ شاید مَیں اِس زمیں کا نہیں
وہ شخص بھی ہے کسی آسماں سے آیا ہوا

More

جواب چھوڑیں