یوم پیدائش عنبرین حسیب عنبر 23 جون 1981 زندگی ب…

یوم پیدائش عنبرین حسیب عنبر
23 جون 1981
زندگی بھر ایک ہی کار ہنر کرتے رہے
اک گھروندا ریت کا تھا جس کو گھر کرتے رہے
ہم کو بھی معلوم تھا انجام کیا ہوگا مگر
شہر کوفہ کی طرف ہم بھی سفر کرتے رہے
اڑ گئے سارے پرندے موسموں کی چاہ میں
انتظار ان کا مگر بوڑھے شجر کرتے رہے
یوں تو ہم بھی کون سا زندہ رہے اس شہر…

More

May be an image of 1 person, tree and lake

جواب چھوڑیں