نِکہت بَریلوی رَہِ وَفا کے ہر اِک پَیچ و خَم کو ج…

نِکہت بَریلوی

رَہِ وَفا کے ہر اِک پَیچ و خَم کو جان لیا
جُنوں میں دشت و بَیاباں تمام چھان لیا

ہر اِک مقام سے ہم سُرخ رُو گزر آئے
قدم قدم پہ محبّت نے اِمتحان لیا

گراں ہُوئی تھی غَمِ زندگی کی دُھوپ، مگر
کسی کی یاد نے اِک شامیانہ تان لیا

More

May be an image of ‎1 person and ‎text that says '‎Nikhat Barelvi (Syed Imtiaz Hussain) B: 1935- Shahjahanpur, UP India Urdu Poetry کراچی بریلوی نکہت‎'‎‎

جواب چھوڑیں