کن سے لگائے بیٹھے تھے چاہت کی آس لوگ – رؤف خلش ک…

کن سے لگائے بیٹھے تھے چاہت کی آس لوگ –
رؤف خلش
کن سے لگائے بیٹھے تھے چاہت کی آس لوگ
خود میں بکھر بکھر گئے آخر اداس لوگ

ملتی ہیں قربتیں تو ملو پَر الگ رہو !
ہوتے بہت ہیں دور جو رہتے ہیں پاس لوگ

کچھ لوگ تھے جو چاندنی بن کر جیا کئے
اب تو نکالنے لگے دل کی بھڑاس لوگ

More

May be an image of ‎4 people and ‎text that says '‎کلاسک اردو Prof. Baig Ehsas Mohsin Jalganvi Raoof Khalish‎'‎‎

جواب چھوڑیں