تُو ہی خلاّقِ جہاں ہے تُو ہی ربّ العالمین یا شفی…

تُو ہی خلاّقِ جہاں ہے تُو ہی ربّ العالمین
یا شفیقُ یا رفیقُ نَحنُ مِن کُلّ یقین

تو سرِ عرشِ مُعلّٰے تُو سرِ بابِ حرم
تو صداقت تو عدالت تو محبت تو کرم
تو صمد ہے تو احد ہے منفرد ہے تیرا دین
یا شفیقُ یا رفیقُ نَحنُ مِن کُلّ یقین

رنگ خوشبو روشنی صحرا سمندر کوہسار
لالہ و گل ماہ و انجم برق و باراں برگ و بار
تیری صناعی کے شاہد تیری قدرت کے امین
یا شفیقُ یا رفیقُ نَحنُ مِن کُلّ یقین

More

جواب چھوڑیں