اجازت۔۔اقتدار جاوید | مکالمہ

SHOPPINGشہرِ رسولﷺ میں ہمارے قیام کی آخری سہ پہر ڈھلنے لگی تھی۔ ہمارے ہوٹل کے سامنے والی سڑک سے آہستہ آہستہ دھوپ اترتی جا رہی تھی۔ میں ہوٹل کے سامنے کھڑی لگژری بس میں اپنا سامان رکھ کر اس گلی میں آ گیا…

حرف تازہ نئی خوشبو میں لکھا چاہتا ہے باب اک اور …

حرف تازہ نئی خوشبو میں لکھا چاہتا ہے باب اک اور محبت کا کھلا چاہتا ہے ایک لمحے کی توجہ نہیں حاصل اس کی اور یہ دل کہ اسے حد سے سوا چاہتا ہے اک حجاب تہہ اقرار ہے مانع ورنہ گل کو معلوم ہے کیا دست صبا چاہتا ہے ریت ہی ریت ہے اس دل میں…

ایڈگر ایلن پو کی طویل نظم دی ریون سے انتخاب اس گہ…

ایڈگر ایلن پو کی طویل نظم دی ریون سے انتخاب اس گہرے اندھیرے میں جھانکتے ہوئے میں دیر تک وہاں کھڑے سوچتا ڈر تا بے یقینی سے خواب بن رہا تھا خواب جو کسی انسان نے کبھی دیکھنے کی ہِمت نہیں کی لیکن خاموشی بے نظیر تھی اور اندھیرے نے کوئی…

اندھیرا مانگنے آیا تھا روشنی کی بھیک ہم اپنا گھر …

اندھیرا مانگنے آیا تھا روشنی کی بھیک ہم اپنا گھر نہ جلاتے تو اور کیا کرتے .. نذیرؔ بنارسی کا یومِ پیدائش November 25, 1909 *نذیرؔ بنارسی* کا شمار نظم اور غزل کے معروف ترین شاعروں میں ہوتا ہے۔ وہ *٢٥؍نومبر ١٩٠٩ء* کو *بنارس* میں پیدا ہوئے…

سب کو حروف التجا ہم نذر کر چکے دشمن تو موم ہو گئے…

سب کو حروف التجا ہم نذر کر چکے دشمن تو موم ہو گئے پتھر وہی رہا ... بلراج کوملؔ کا یومِ وفات November 25 2013 اردو شعر و ادب کی معروف شخصیت ، ادیب ، شاعر ، نقاد اور افسانہ نگار بلراج_کوملؔ 25؍ستمبر 1928ء کو سیالکوٹ (پاکستان) میں پیدا…

( غیر مطبوعہ ) یہ بھنورہے کہ دریا میں پانی کا رقص…

( غیر مطبوعہ ) یہ بھنورہے کہ دریا میں پانی کا رقص موج در موج الجھی روانی کا رقص دیکھنا ہو تو آنکھوں میں دیکھیں مری ایک ٹھہری ہوئی زندگانی کا رقص تھک کے کردار کرتے چلے جائیں گے اور جاری رہے گا کہانی کا رقص بج رہی ہے کہیں دور اداسی…

کہت کبیر ( دوہے) چلتی چکی دیکھ کر ، دِیا کبیرا ر…

کہت کبیر ( دوہے) چلتی چکی دیکھ کر ، دِیا کبیرا روئے دوئی پٹن کے بیچ میں ، ثابت بچا نہ کوئے ( دو پٹ بھیتر آئی کے ' ثابت بچا نہ کوئے ) بُرا جو دیکھن میں چلا ، بُرا نہ مِلیا کوئے جو مَن کھوجا اپنا ، تو مُجھ سے بُرا نہ کوئے کبیرا کھڑا…

( غیر مطبوعہ ) مجھے تلاش تھی جس کی ' وہی کبھ…

( غیر مطبوعہ ) مجھے تلاش تھی جس کی ' وہی کبھی نہ مِلی ہر ایک چیز مِلی ' ایک زندگی نہ مِلی تِری تلاش میں پیروں میں پڑ گئے چھالے مگر یہ منزلِ مقصود تو کبھی نہ مِلی خوشی سے دوستی میری بھی ہے ' مگر اک دن خفا ہوئی وہ کچھ ایسے کی…