ڈیلی آرکائیو

2019-01-22

قافلہ درد کا ٹھہرے گا کہاں ہم سفرو کوئی منزل ہے ن…

قافلہ درد کا ٹھہرے گا کہاں ہم سفرو کوئی منزل ہے نہ بستی نہ کہیں سایا ہے کفیل آزر مشورہ کسی کی یاد ستاتی ہے رات دن تم کو کسی کے پیار سے مجبور ہو گئی ہو تم تمہارا درد مجھے بھی اداس رکھتا ہے قریب آ کے بہت دور ہو گئی ہو تم تمہاری…

”آئینے سے جھانکتی نظم“ میرے بالوں میں چاندی اُتر …

”آئینے سے جھانکتی نظم“ میرے بالوں میں چاندی اُتر آئی ھے پیارے بابا !! میں کچھ بال توڑ دوں؟ کہ ھم اُن کو بیچیں گے پھر جو روپے ھوں گے اُن سے جہیز اور شادی کی تیاریاں ھو سکیں گی۔ میں یوں آپ کا روز بجھتا ھُوا اور مُرجھایا چہرہ نہیں دیکھ…

"”بارش کے رُوپ”” ہیں ایک بارش کے رُوپ کِتنے! وہی…

🍁🍁""بارش کے رُوپ""🍁🍁 ہیں ایک بارش کے رُوپ کِتنے! وہی ہے بادل ، وہی گھٹا ہے پر راز کیا ہے! تمام قطرے زمیں پہ اِک ساتھ آ کے گِرتے ہیں پھر بھی سب ایک سے نہیں لیں کہ جیسے نغمہ، بہت سے سازوں سے مِل کے بنتا ہے اور پھر بھی تمام سازوں کا اپنا…

بارش ہوئی تو پُھولوں کے تَن چاک ہو گئے موسم کے …

بارش ہوئی تو پُھولوں کے تَن چاک ہو گئے موسم کے ہاتھ بھیگ کے سفّاک ہو گئے بادلوں کو کیا خبر ہے کہ بارش کی چاہ میں کیسے بلند و بالا شجر خاک ہو گئے جگنو کو دن کے وقت پرکھنے کی ضد کریں بچّے ہمارے عہد کے چالاک…

"”ساون کی سہانی رات بھی ہے”” ساون کی سہانی رات بھ…

🍁🍁""ساون کی سہانی رات بھی ہے""🍁🍁 ساون کی سہانی رات بھی ہے برسات بھی ہے ہاتھوں میں تمہارا ہاتھ بھی ہے برسات بھی ہے کل پھر حالات کی دھوپ میں جلنا ہے مجھ کو گو آج تمہارا ساتھ بھی ہے برسات بھی ہے آنکھوں میں سلگتے ہجر کی رُت…

صابر ظفر (ناصر کاظمی کی مشہور غزل ”نئے کپڑے بدل ک…

صابر ظفر (ناصر کاظمی کی مشہور غزل ''نئے کپڑے بدل کر جاؤں کہاں اور بال بناؤں کس کے لئے'' کے جواب میں کہی گئی غزل) نئے کپڑے بدل اور بال بنا ترے چاہنے والے اور بھی ہیں کوئی چھوڑ گیا یہ شہر تو کیا ترے چاہنے والے اور بھی ہیں کئی پلکیں ہیں…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…