ڈیلی آرکائیو

2019-02-07

ندا فاضلی کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا کہیں زم…

ندا فاضلی کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا کہیں زمین کہیں آسماں نہیں ملتا تمام شہر میں ایسا نہیں خلوص نہ ہو جہاں امید ہو اس کی وہاں نہیں ملتا کہاں چراغ جلائیں کہاں گلاب رکھیں چھتیں تو ملتی ہیں لیکن مکاں نہیں ملتا یہ کیا عذاب ہے سب…

ایک زمین مرزا غالبؔ دہلوی راغبؔ مرادآبادی ۔۔۔۔۔ غا…

ایک زمین مرزا غالبؔ دہلوی راغبؔ مرادآبادی ۔۔۔۔۔ غالبؔ کِس کا جُنُونِ دید تمنّا شکار تھا آئینہ خانہ وادیِ جوہر غُبار تھا کِس کا خیال آئینۂ اِنتِظار تھا ہر برگِ گُل کے پردے میں دِل بے قرار تھا ایک ایک قطرے کا مُجھے دینا پڑا حِساب خُونِ…

عشق میں کوئی زماں اور نہ مکاں ہوتا ہے وہ دو عالم س…

عشق میں کوئی زماں اور نہ مکاں ہوتا ہے وہ دو عالم سے الگ ایک جہاں ہوتا ہے شدّتِ شوق کا اللہ رے فسوں! اُف رے فریب! اُن کی نفرت پہ محبّت کا گماں ہوتا ہے صرف اک دل ہی وہ معبد ہے، وہ اک معبدِ عشق جس میں ناقوس ہم آوازِ اذاں ہوتا ہے اُن سے…

7 فروری صُوفی غلام مُصطفیٰ تبسمؔ کے یومِ وفات پر خ…

7 فروری صُوفی غلام مُصطفیٰ تبسمؔ کے یومِ وفات پر خراج عقیدت 🌷🌷🌷🌷 سو بار چمن مہکا، سو بار بہار آئی دنیا کی وہی رونق، دل کی وہی تنہائی اک لحظہ بہے آنسو، اک لحظہ ہنسی آئی سیکھے ہیں نئے دل نے اندازِ شکیبائی یہ رات کی…

غالب کی ایک خوبصورت فارسی غزل مع منظوم تراجم – ز م…

غالب کی ایک خوبصورت فارسی غزل مع منظوم تراجم - ز من گَرَت نہ بُوَد باور انتظار بیا غالب کی مندرجہ ذیل غزل صوفی تبسم کے پنجابی ترجمے اور غلام علی کی گائیکی کی وجہ سے شہرہ آفاق مقبولیت حاصل کر چکی ہے . میرے شوق دا نیں اعتبار تینوں،آ جا ویکھ…

*انٹرویو* بڑی دوڑ دھوپ کے بعد وہ آفس پہنچ گیا…

🔊👇🏻 📃 *انٹرویو* بڑی دوڑ دھوپ کے بعد وہ آفس پہنچ گیا؛ آج اس کا انٹرویو تھا ۔ وہ گھر سے نکلتے ہوئے سوچ رہا تھا ؛ اے کاش آج میں کامیاب ہو گیا تو فوراً اپنے پشتینی مکان کو خیر باد کہہ دونگا اور یہیں شہر میں قیام کروں گا ؛ امی اور ابو کی…

گزر رہے تھے گلی سے جنابِ شیخ ایسے کہ جیسے کوئی کرم…

گزر رہے تھے گلی سے جنابِ شیخ ایسے کہ جیسے کوئی کرم کا امیدوار چلے نظر ملی تو کہا نائیکہ نے کوٹھے سے ’چلے بھی آؤ کہ گلشن کا کاروبار چلے‘ راغب مرادآبادی فیض احمد فیضؔ کا ایک شعر جو، ہر صاحبِِ ذوق کو یاد ہے، راغب مرادآبادی نے اس کی تضمین کی…

کون کسی کا یار ہے سائیں یاری بھی بیوپار ہے سائیں …

کون کسی کا یار ہے سائیں یاری بھی بیوپار ہے سائیں یہ بھی جھوٹا، وہ بھی جھوٹا جھوٹا سب سنسار ہے سائیں ہم تو ہیں بس رمتے جوگی آپ کا تو گھر بار ہے سائیں کب سے اُس کو ڈھونڈ رہا ہوں جس کو مجھ سے پیار ہے سائیں کرودھ کپٹ ہے جس کے من میں مفلس…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…