ڈیلی آرکائیو

2019-02-12

جھوٹ کے رنگ ہیں پھولوں کی طرح اور سچائی بَب…

جھوٹ کے رنگ ہیں پھولوں کی طرح اور سچائی بَبُولوں کی طرح دشتِ احساس میں کتنے موسم رقص کرتے ہیں بگولوں کی طرح اتنے دعوے سے نہ چاہو صاحب ٹوٹ جاؤ گے اصولوں کی طرح وہ گیا ہے تو اب اُس کے سائے گھر میں رہتے ہیں ہَیولوں…

مدت ہوئی ہے یار کو مہماں کئے ہوئے​ جوشِ قدح سے بزم…

مدت ہوئی ہے یار کو مہماں کئے ہوئے​ جوشِ قدح سے بزم چراغاں کئے ہوئے​ کرتا ہوں جمع پھر جگرِ لخت لخت کو​ عرصہ ہوا ہے دعوتِ مژگاں کئے ہوئے​ پھر وضعِ احتیاط سے رکنے لگا ہے دم​ برسوں ہوئے ہیں چاک گریباں کئے ہوئے​ پھر گرمِ نالہ ہائے شرر بار ہے…

آرزُو، کرب، اَلم ، شوق، تمنّا، حسرَت زِیست وہ لفظ…

آرزُو، کرب، اَلم ، شوق، تمنّا، حسرَت زِیست وہ لفظ ہے، جس کی کئی تفسیریں ہیں احمر کاشی پوری ......... شہر سے دُور، جو ٹُوٹی ہُوئی تعمیریں ہیں ! اپنی رُوداد سُناتی ہُوئی تصویریں ہیں میرے اشعار کو اشعار سمجھنے والو ! یہ مِرے خُون سے…

آپ کی صورت تو دیکھا چاہیے ظلمت کدے میں میرے شبِ غم…

آپ کی صورت تو دیکھا چاہیے ظلمت کدے میں میرے شبِ غم کا جوش ہے اک شمع ہے دلیلِ سحر ، سو خموش ہے دیکھو مجھے، جو دیدہء عبرت نگاہ ہو میری سنو، جو گوشِ نصیحت نیوش ہے میں غریب شاعر دس برس سے تاریخ لکھنے اور شعر کی اصلاح دینے پر متعلق ہوا ہوں۔…

اے اندھیرے دیکھ لے منہ تیرا کالا ہو گیا م…

اے اندھیرے دیکھ لے منہ تیرا کالا ہو گیا ماں نے آنکھیں کھول دیں گھر میں اجالا ہو گیا رائی کے دانے برابر بھی نہ تھا جس کا وجود نفرتوں کے بیچ رہ کر وہ ہمالا ہو گیا ایک آنگن کی طرح یہ شہر تھا کل تک مگر نفرتوں میں ٹوٹ…

کون کہتا ہے کہ موت آئی تو مر جاؤں گا میں تو دریا …

کون کہتا ہے کہ موت آئی تو مر جاؤں گا میں تو دریا ہوں سمندر میں اتر جاؤں گا تیرا در چھوڑ کے مَیں اور کدھر جاؤں گا گھر میں گِھر جاؤں گا صحرا میں بکھر جاؤں گا تیرے پہلو سے جو اٹھوں گا،تو مشکل یہ ہے صرف اک شخص کو پاؤں…

"تاج مَحَل” تاج تیرے لیے اک مظہرِ الفت ہی سہی تج…

🍁🍁"تاج مَحَل"🍁🍁 تاج تیرے لیے اک مظہرِ الفت ہی سہی تجھ کو اس وادیٔ رنگیں سے عقیدت ہی سہی میری محبوب کہیں اور ملا کر مجھ سے بزمِ شاہی میں غریبوں کا گزر کیا معنی؟ ثبت جس راہ میں ہُوں سطوتِ شاہی کے نشاں اس پہ الفت بھری رُوحوں کا سفر…

شیریں لبوں میں خلد کا مفہوم بے نقاب زلفوں میں جھوم…

شیریں لبوں میں خلد کا مفہوم بے نقاب زلفوں میں جھومتی ہوئی موجِ جنوں نواز موجِ جنوں نواز میں طوفانِ بے خودی طوفانِ بے خودی میں تمناؤں کا گداز باتوں میں لہلہاتی ہوئی جام کی کھنک اور جام کی کھنک میں بہاروں کے برگ و ساز اعضا میں لوچ،باتوں…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…