ڈیلی آرکائیو

2019-02-24

۲۴ فروری جدید نظم گو جناب دانیال طریرؔ کے یومِ ولا…

۲۴ فروری جدید نظم گو جناب دانیال طریرؔ کے یومِ ولادت پر 🍁🍁نظم گو کے لیے مشورہ🍁🍁 نظم کہوگے کہہ لوگے کیا؟ دیکھو اتنا سہل نہیں ہے بنتی بات بگڑ جاتی ہے اکثر نظم اکڑ جاتی ہے چلتے چلتے "لا" کو مرکز مان کے گھومنے لگ جاتی ہے لڑتے لڑتے…

۲۴ فروری جدید نظم گو جناب دانیال طریرؔ کے یومِ ولا…

۲۴ فروری جدید نظم گو جناب دانیال طریرؔ کے یومِ ولادت پر 🍁🍁آواز کا نوحہ🍁🍁 گڑیا! بولو گڑیا! اپنی آنکھیں کھولو گڑیا! دل پہ بوجھ ہے کوئی تو جتنا جی چاہے رو لو گڑیا! یہ خاموشی مجھ کو کاٹ رہی ہے گڑیا! موت کی دیمک مجھ کو چاٹ رہی ہے…

ستم گر تجھ سے ہم کب شکوۂ بیداد کرتے ہیں ہمیں فریاد…

ستم گر تجھ سے ہم کب شکوۂ بیداد کرتے ہیں ہمیں فریاد کی عادت ہے، ہم فریاد کرتے ہیں متاعِ زندگانی اور بھی برباد کرتے ہیں ہم اس صورت سے تسکینِ دلِ ناشاد کرتے ہیں ہواؤ!! ایک پَل کے واسطے ِللہ رُک جاؤ وہ میری عرض پر دھیمے سے کچھ…

جُھوم کے جب رِندوں نے پِلا دی شیخ نے چُپکے چُپکے د…

جُھوم کے جب رِندوں نے پِلا دی شیخ نے چُپکے چُپکے دُعا دی ایک کمی تھی تاج محل میں مَیں نے تِری تصویر لگا دی آپ نے جُھوٹا وعدہ کرکے آج ہماری عُمر بڑھا دی ہائے یہ اُن کا طرزِ محبّت آنکھ سے بس اِک بُوند گِرا دی۔۔۔! کلام کیفؔ بھوپالی آواز…

دِل سے ھر گزری بات گزری ھے کِس قیامت کی رات گزری ھ…

دِل سے ھر گزری بات گزری ھے کِس قیامت کی رات گزری ھے چاندنی ، نیم وا دریچہ ، سکوت آنکھوں آنکھوں میں رات گزُری ھے ھائے وہ لوگ ، خُوب صُورت لوگ جن کی دُھن میں ، حیات گزُری ھے کسی بھٹکے ھُوئے خیال کی موج کتنی یادوں کے ساتھ گزُری ھے…

۲۴ فروری جدید نظم گو جناب دانیال طریرؔ کے یومِ ولا…

۲۴ فروری جدید نظم گو جناب دانیال طریرؔ کے یومِ ولادت پر 🍁🍁تمنا کا دوسرا قدم🍁🍁 وقت اور نا وقت کے مابین کتنا فاصلہ کتنا خلا کتنی گھنیری خامشی ہے جاننے کی کوششوں میں آنکھ کی اور دل کی اجلی آنکھ کی بینائیاں کم پڑ گئی ہیں سوچتا ہوں…

ایک زمین مرزا داغؔ دہلوی جلیلؔ مانکپوری ۔۔۔۔۔ داغؔ…

ایک زمین مرزا داغؔ دہلوی جلیلؔ مانکپوری ۔۔۔۔۔ داغؔ مِلاتے ہو اُسی کو خاک میں جو دِل سے مِلتا ہے مِری جاں چاہنے والا بڑی مُشکِل سے مِلتا ہے کہیں ہے عید کی شادی کہیں ماتم ہے مقتل میں کوئی قاتِل سے مِلتا ہے کوئی بِسمِل سے مِلتا ہے پسِ…

فراموش کر دیے گئے مجید امجد کا کیا ھی کمال تخیل ھے…

فراموش کر دیے گئے مجید امجد کا کیا ھی کمال تخیل ھے۔ یہ نظم پڑھیں۔ نازنیں ! اَجنبی شہرِ محبت میں ھُوں میں تیرے دیس کے اطوار سے ناواقف ھُوں دیدۂ شوق کی بیباک نگاھوں پہ نہ جا کیا کروں جراتِ گفتار سے ناواقف ھُوں چل پڑا ھُوں تیرے دامن کو پکڑ…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…