ڈیلی آرکائیو

2019-02-25

یہ وفائیں ساری دھوکے پھر یہ دھوکے بھی کہاں احمد ہم…

یہ وفائیں ساری دھوکے پھر یہ دھوکے بھی کہاں احمد ہمدانی یہ وفائیں ساری دھوکے پھر یہ دھوکے بھی کہاں چند دن کی بات ہے پھر لوگ ہم سے بھی کہاں تم کو آنا تھا نہ آئے وقت لیکن کٹ گیا مضمحل ہوتے ہو کیوں ہم رات روئے بھی کہاں پیڑ یہ سوکھے ہوئے…

آگے بڑھے نہ قصۂ عشق بتاں سے ہم سب کچھ کہا مگر نہ …

آگے بڑھے نہ قصۂ عشق بتاں سے ہم سب کچھ کہا مگر نہ کھلے راز داں سے ہم اب شوق سے بگڑ کے ہی باتیں کیا کرو کچھ پا گئے ہیں آپ کے طرز بیاں سے ہم ..... کوئی محرم نہیں ملتا جہاں میں مجھے کہنا ہے کچھ اپنی زباں میں ہوتی نہیں قبول دعا ترک عشق…

سینے کا بوجھ اشکوں میں ڈھلتے ہوئے بھی دیکھ پتھر …

سینے کا بوجھ اشکوں میں ڈھلتے ہوئے بھی دیکھ پتھر کو موجِ خوں میں پگھلتے ہوئے بھی دیکھ ہاتھوں میں اپنے وقت کی تلوار کو سنبھال پھر زخم کھا کے مجھ کو سنبھلتے ہوئے بھی دیکھ آنکھوں کے آئینوں سے ہٹا آنسوؤں کی برف…

تو میرا ہے تو میرا ہے تیرے من میں چھپے ہوئے سب دک…

🍁🍁تو میرا ہے🍁🍁 تو میرا ہے تیرے من میں چھپے ہوئے سب دکھ میرے ہیں تیری آنکھ کے آنسو میرے تیرے لبوں پہ ناچنے والی یہ معصوم ہنسی بھی میری تو میرا ہے ہر وہ جھونکا جس کے لمس کو اپنے جسم پہ تو نے بھی محسوس کیا ہے پہلے میرے ہاتھوں کو چھو…

ﻓﺎﺻﻠﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﭩﺘﮯ ﺧﻮﺍﺏ ﺍﻭﺭ ﺧﻮﺍﮨﺶ ﻣﯿﮟ ﻧﯿﻨﺪ ﺑﮭﺮ ﮐﯽ ﺩﻭ…

🍁🍁ﻓﺎﺻﻠﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﭩﺘﮯ🍁🍁 ﺧﻮﺍﺏ ﺍﻭﺭ ﺧﻮﺍﮨﺶ ﻣﯿﮟ ﻧﯿﻨﺪ ﺑﮭﺮ ﮐﯽ ﺩﻭﺭﯼ ﮨﮯ ﻭﺻﻞ ﺍﻭﺭ ﺟُﺪﺍﺋﯽ ﻣﯿﮟ ﺁﻧﮑﮫ ﺑﮭﺮ ﮐﺎ ﻭﻗﻔﮧ ﮨﮯ ﮨﺠﺮ ﮐﮯ ﺍﻧﺪﮬﯿﺮﻭﮞ ﮐﯽ ﭼﺎﻧﺪ ﺑﮭﺮ ﺗﻤﻨّﺎ ﮨﮯ ﭘﮭﺮ ﺑﮭﯽ ﺍﯾﺴﺎ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﻓﺎﺻﻠﮯ ﻣﭩﺎﻧﮯ ﻣﯿﮟ ﻋﻤﺮ ﺑﯿﺖ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ فاصلے نہیں مٹتے جناب شہزاد نیّر از:-چاک سے…

اُردُو تُخمِ اُردُو ولیؔ نے بویا تھا اس کی نشو و …

اُردُو تُخمِ اُردُو ولیؔ نے بویا تھا اس کی نشو و نُما کا جویا تھا جیتے جی اِس کو خُون سے سینچا دیکھتے دیکھتے پَھلا پُھولا شاخ اِس کی شمال میں آئی جِس کی خسروؔ نے آبیاری کی دردؔ و سوداؔ نے اِس کو اپنایا میرؔ و مومنؔ کا تھا یہ سرمایا…

برکھا رُت میں ایک دن جس وقت کہ ھم لوگ جُھول جُھول …

برکھا رُت میں ایک دن جس وقت کہ ھم لوگ جُھول جُھول کر کَجریاں سُن رھے تھے اور باورچی خانے کے برساتی پکوانوں کا نمکین دُھواں نیم کی شاخوں کے نیچے مَچل رھا تھا کہ میری کِھلائی ھانپتی کانپتی لکڑی ٹیکتی آئیں ، گانے والیوں سے کہا ، بچیو، ذرا…

ترا خیال بھی ہے وضعِ غم کا پاس بھی ہے مگر یہ بات …

ترا خیال بھی ہے وضعِ غم کا پاس بھی ہے مگر یہ بات کہ دنیا نظر شناس بھی ہے بہارِ صبحِ ازل پھر گئی نگاہوں میں وہی فضا ترے کُوچے کے آس پاس بھی ہے جو ہو سکے تو چلے آؤ آج میری طرف ملے بھی دیر ہوئی اور جی اداس بھی ہے خلوصِ نیّتِ رہرو…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…