ڈیلی آرکائیو

2019-03-02

ھم قافیہ غیر مُردّف علامّہ محمد اقبالؔ ناصرؔ رضا ک…

ھم قافیہ غیر مُردّف علامّہ محمد اقبالؔ ناصرؔ رضا کاظمی ۔۔۔۔۔ علامّہ اقبالؔ ہر شے مسافر ہر چیز راہی کیا چاند تارے کیا مُرغ و ماہی تُو مردِ میداں تُو میرِ لشکر نُوری حُضُوری تیرے سپاہی کُچھ قدر اپنی تُو نے نہ جانی یہ بے سوادی یہ کم…

۲ مارچ___مشہور شاعِر جناب ناصرؔ کاظمی کے یومِ وفات…

۲ مارچ___مشہور شاعِر جناب ناصرؔ کاظمی کے یومِ وفات پر زندگی بھر وفا ہمیں سے ہوئی سچ ہے یارو خطا ہمیں سے ہوئی دل نے ہر داغ کو رکھا محفُوظ یہ زمیں خوشنُما ہمیں سے ہوئی ہم سے پہلے زمینِ شہرِ وفا خاک تھی کیمیا ہمیں سے ہوئی کتنی…

ناصر کی سگنیچر غزل ، ایک ایک شعر لاجواب۔ جس کا ایک…

ناصر کی سگنیچر غزل ، ایک ایک شعر لاجواب۔ جس کا ایک شعر ان کی قبر کے کتبے پر بھی کنداں ھے۔ چھوٹی بحر کا بے مثال شاعر۔ عشق جب زمزمہ پیرا ھو گا حُسن خود محوِ تماشا ھو گا دائم آباد رھے گی دنیا ھم نہ ھوں گے ، کوئی ھم سا ھو گا ھم تجھے…

غم ہے یا خوشی ہے تُو میری زِندگی ہے تُو آفتوں کے …

غم ہے یا خوشی ہے تُو میری زِندگی ہے تُو آفتوں کے دَور میں چین کی گھڑی ہے تُو میری رات کا چراغ میری نیند بھی ہے تُو مَیں خِزاں کی شام ہُوں رُت بہار کی ہے تُو دوستوں کے درمیاں وجۂ دوستی ہے تُو میری ساری عُمر میں ایک ہی کمی ہے تُو…

۲ مارچ____مشہور شاعِر چھوٹی بحر کے شہنشاہ جناب ناص…

۲ مارچ____مشہور شاعِر چھوٹی بحر کے شہنشاہ جناب ناصرؔ کاظمی کے یومِ وفات پر غم ہے یا خوشی ہے تو میری زندگی ہے تو آفتوں کے دور میں چین کی گھڑی ہے تو میری رات کا چراغ میری نیند بھی ہے تو میں خزاں کی شام ہوں رُت بہار…

مجھ میں جوکچھ اچھاہے سب اس کا ہے میرا جتنا چرچا ہے…

مجھ میں جوکچھ اچھاہے سب اس کا ہے میرا جتنا چرچا ہے سب اس کا ہے اس کا میرا رشتہ بڑا پرانا ہے میں نے جو کچھ سوچا ہے سب اس کا ہے میری آنکھیں اس کے نور سے روشن ہیں میں نے جو کچھ دیکھا ہے سب اس کا ہے میں نےجو کچھ کھویا تھاسب اس کا تھا میں نے…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…