ڈیلی آرکائیو

2019-04-04

انقلاب دہر رک رک کر جواں بنتا گیا جو سبک سر تھا وہ…

انقلاب دہر رک رک کر جواں بنتا گیا جو سبک سر تھا وہی سنگ‌ راں بنتا گیا نغمۂ دل جب بڑھا آہ و فغاں بنتا گیا آسماں اک اور زیر آسماں بنتا گیا جانے کیا بھر دی ہیں اس نے اس چمن میں شوخیاں جو بھی آیا وہ چمن کا رازداں بنتا گیا ہر نفس کو اپنی…

خود فراموشی چلا تھا گھر سے کہ بچے کی فیس دینی ہے ک…

خود فراموشی چلا تھا گھر سے کہ بچے کی فیس دینی ہے کہا تھا بیوی نے بیچ آؤں بالیاں اس کی کہ گھر کا خرچ چلے اور دوا بھی آ جائے نہ جانے کیا ہوا جب گھر پہنچ گیا اپنے بتایا بیوی نے پھر آج پی کے آیا ہوں سلیمان اریب

بھویں تنتی ہیں خنجر ہاتھ میں ہے تن کے بیٹھے ہیں دا…

بھویں تنتی ہیں خنجر ہاتھ میں ہے تن کے بیٹھے ہیں داغؔ دہلوی بھویں تنتی ہیں خنجر ہاتھ میں ہے تن کے بیٹھے ہیں کسی سے آج بگڑی ہے کہ وہ یوں بن کے بیٹھے ہیں دلوں پر سیکڑوں سکے ترے جوبن کے بیٹھے ہیں کلیجوں پر ہزاروں تیر اس چتون کے بیٹھے ہیں…

وقت نے کیا ، کیا حسیں ستم تم رھے نہ تم ، ھم رھے ھ…

وقت نے کیا ، کیا حسیں ستم تم رھے نہ تم ، ھم رھے ھم ´ بے قرار دل ، اِس طرح ملے جس طرح کبھی ، ھم جدا نہ تھے تم بھی کھو گئے ، ھم بھی کھو گئے ایک راہ پر ، چل کے دو قدم ´ جائیں گے کہاں ، سُوجھتا نہیں چل پڑے مگر ، راستہ نہیں کیا تلاش ھے ؟؟…

دل کی بات کہی نہیں جاتی چپکے رہنا ٹھانا ہے حال اگ…

دل کی بات کہی نہیں جاتی چپکے رہنا ٹھانا ہے حال اگر ہے ایسا ہی تو جی سے جانا، جانا ہے اس کی نگاہِ تیز ہے میرے دوش و بر پر ان روزوں یعنی دل پہلو میں میرے تیرِستم کا نشانہ ہے دل جو رہے تو پاؤں کو بھی دامن میں ہم کھینچ رکھیں صبح سے لے…

جعفر زیدی کی گائی شاہ حسین کی یہ کافی آپ کو کسی او…

جعفر زیدی کی گائی شاہ حسین کی یہ کافی آپ کو کسی اور ھی دنیا میں لے جائے گی۔ خاص طور پر اِس کا آخری حصہ۔ ”نیہوں لا لیا بے پرواہ دے نال“ نیہوں لا لیا ، بے پرواہ دے نال اوس دین دُنی دے ، شاہ دے نال قاضی مُلا متیں دیندے کھرے سیانے راہ…

محبتوں کا شاعر شِو کمار بٹالوی اُس پرندے کی مانند …

محبتوں کا شاعر شِو کمار بٹالوی اُس پرندے کی مانند تھا جو اپنا آخری گیت کا کر اپنے ھی تن بدن کو آگ لگا لیتا ھے اور اُس میں جل کر مَر جاتا ھے۔ پنجابی ادب کو اپنی شاعری کا بے بہا خزانہ دے کر صرف پینتیس برس کی عمر میں اس دنیا سے چلا گیا۔…

لوحِ مزار دیکھ کے ، جی دنگ رہ گیا ہر ایک سر کے سات…

لوحِ مزار دیکھ کے ، جی دنگ رہ گیا ہر ایک سر کے ساتھ فقط ، سنگ رہ گیا بدنام ہو کے عشق میں ، ہم سرخرو ہوئے اچھا ہوا کہ نام گیا ، ننگ رہ گیا ٴ ہوتی نہ ہم کو ، سایۂ دیوار کی تلاش لیکن محیطِ زیست ، بہت تنگ رہ گیا سیرت نہ ہو تو ، عارض…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…