ڈیلی آرکائیو

2019-04-13

بہ پایاں چوں رسد ایں عالم پیر شود بے پردہ ہر پوشید…

بہ پایاں چوں رسد ایں عالم پیر شود بے پردہ ہر پوشیدہ تقدیر مکن رسوا حضور خواجہ ما را حساب من زچشم او نہاں گیر (اے میرے رب! روز قیامت) یہ جہان پیر اپنے انجام کو پہنچ جائے اور ہر پوشیدہ تقدیر ظاہر ہو جائے تو اس دن مجھے میرے آقا و مولا کے…

میں جو صحرا میں کسی پیڑ کا سایہ ہوتا دل زدہ کوئی …

میں جو صحرا میں کسی پیڑ کا سایہ ہوتا دل زدہ کوئی گھڑی بھر کو تو ٹھہرا ہوتا اب تو وہ شاخ بھی شاید ہی گلستاں میں ملے کاش اس پھول کو اس وقت ہی توڑا ہوتا وقت فرصت نہیں دے گا ہمیں مڑنے کی کبھی آگے بڑھتے ہوئے ہم نے جو یہ سوچا ہوتا…

ساغر صدیقی : دستور یہاں بھی گونگے ہیں فرمان یہاں ب…

ساغر صدیقی : دستور یہاں بھی گونگے ہیں فرمان یہاں بھی اندھے ہیں دستور یہاں بھی گونگے ہیں فرمان یہاں بھی اندھے ہیں اے دوست خدا کا نام نہ لے ایمان یہاں بھی اندھے ہیں زردار توقّع رکھتا ھے نادار کی گاڑھی محنت پہ؟؟؟ مزدور یہاں بھی دیوانے…

ہم نے دیکھا ہے زمانے کا بدلنا لیکن ان کے بدلے ہوئ…

ہم نے دیکھا ہے زمانے کا بدلنا لیکن ان کے بدلے ہوئے تیور نہیں دیکھے جاتے .. علی احمد جلیلیؔ صاحب کا یومِ وفات April 13, 2005 *آج شاعری کی کلاسیکی روایت کے امین، شائستہ غزل گو، دکن کے ممتاز اور معروف شاعر” علی احمد جلیلیؔ صاحب “ کا یومِ…

تو قادر و غیور غنی و کریم ہے تو مالک وسمیع،بصیر و …

تو قادر و غیور غنی و کریم ہے تو مالک وسمیع،بصیر و علیم ہے تو وارث و حلیم ،غفور رحیم ہے تو حافظ و حفیظ ،عزیز وحکیم ہے واحد ہے تو قدیر ہے تو کبیر ہے تو چاہ جو تو گداکو بھی پادشاہ کردے ذرے کو اوج نیر اعظم عطا کرے در کوخذف،خذف کو در بے بہا…

ماہ و سال اُسی روِش پہ ہے قائم مزاجِ دیدہؑ و دل ل…

ماہ و سال اُسی روِش پہ ہے قائم مزاجِ دیدہؑ و دل لہو میں اب بھی تڑپتی ہیں بجلیاں کہ نہیں زمیں پہ اب بھی اُترتا ہے آسماں کہ نہیں ؟ کسی کی جیب و گریباں کی آزمائش میں کبھی خود اپنی قبا کا خیال آتا ہے ذرا سا وسوسہؑ ماہ و سال آتا ہے؟ کبھی یہ…

یاد آئیں گے زمانے کو مثالوں کے لیے جیسے بوسیدہ کتا…

یاد آئیں گے زمانے کو مثالوں کے لیے جیسے بوسیدہ کتابیں ہوں حوالوں کے لیے فارغ بخاری کا یومِ وفات April 13, 1997 11 نومبر 1917ء اردو کے ممتاز شاعر، ادیب اور نقاد فارغ بخاری کی تاریخ پیدائش ہے۔ فارغ بخاری کا اصل نام سید میر احمد شاہ تھا…