ڈیلی آرکائیو

2019-06-02

مولویوں کا شغل تکفیر شبلی نعمانی اک مولوی صاحب سے …

مولویوں کا شغل تکفیر شبلی نعمانی اک مولوی صاحب سے کہا میں نے کہ کیا آپ کچھ حالت یورپ سے خبردار نہیں ہیں آمادۂ اسلام ہیں لندن میں ہزاروں ہر چند ابھی مائل اظہار نہیں ہیں تقلید کے پھندوں سے ہوئے جاتے ہیں آزاد وہ لوگ بھی جو داخل اصرار…

تپش گلزار تک پہنچی لہو دیوار تک آیا اختر حسین جعفر…

تپش گلزار تک پہنچی لہو دیوار تک آیا اختر حسین جعفری تپش گلزار تک پہنچی لہو دیوار تک آیا چراغ خود کلامی کا دھواں بازار تک آیا ہوا کاغذ مصور ایک پیغام زبانی سے سخن تصویر تک پہنچا ہنر پرکار تک آیا عبث تاریک رستے کو تہ خورشید جاں رکھا…

بوسہ دیتے نہیں اور دل پہ ہے ہر لحظہ نگاہ جی میں کہ…

بوسہ دیتے نہیں اور دل پہ ہے ہر لحظہ نگاہ جی میں کہتے ہیں کہ مفت آئے تو مال اچّھا ہے مرزا اسد اللہ خان غالب .... یہ بھی کہتے ہو کہ بے چین کیا کس نے تجھے یہ بھی کہتے ہو مرا حسن و جمال اچھا ہے داغ .... کیوں پرکھتے ہو سوالوں سے جوابوں کو…

جب درد کی شمعیں جلتی ہیں احساس کے نازک سینے میں اک…

جب درد کی شمعیں جلتی ہیں احساس کے نازک سینے میں اک حسن سا شامل ہوتا ہے پھر تنہا تنہا جینے میں کچھ لطف کی گرمی کی خاطر کچھ جانِ وفا کے صدقے میں گیسوئے الم کے سائے میں راحت سی ملی ہے پینے میں آغوشِ تمنا چھو آئیں جب زلفِ یار…

فراقؔ گورکھپُوری یُوں تو نہ چارہ کار تھا جان دیے …

فراقؔ گورکھپُوری یُوں تو نہ چارہ کار تھا جان دیے بغیر بھی عہدہ برا نہ ہوسکا عِشق جیے بغیر بھی دیکھ یہ شامِ ہجر ہے، دیکھ یہ ہے سکونِ یاس کاٹتے ہیں شبِ فِراق صُبح کیے بغیر بھی گو کہ زباں نہیں رُکی، پِھر بھی نہ کُچھ کہا گیا دیکھ سکُوتِ…

زمانہ کچھ بھی کہے تیری آرزو کر لوں ارشد کمال زمانہ…

زمانہ کچھ بھی کہے تیری آرزو کر لوں ارشد کمال زمانہ کچھ بھی کہے تیری آرزو کر لوں شب سیاہ میں سورج کی جستجو کر لوں مرے خدا مجھے توفیق سرکشی دیدے خزاں ہے سامنے کچھ ذکر رنگ و بو کر لوں اگر ہو مجھ کو میسر کہیں سے کوئی کرن تو شب دریدہ ہے…

ثاقبؔ لکھنوی نہ آسمان ہے ساکن، نہ دِل ٹھہرتا ہے ز…

ثاقبؔ لکھنوی نہ آسمان ہے ساکن، نہ دِل ٹھہرتا ہے زمانہ نام گُزرنے کا ہے، گُزرتا ہے وہ میری جان کا دُشمن سہی، مگر صیّاد مِری کہی ہُوئی باتوں پہ کان دھرتا ہے ہَمِیں ہیں وہ، جو اُمیدِ فَنا پہ جیتے ہیں زمانہ زندگیِ بے بَقا پہ مرتا ہے ابھی…