ڈیلی آرکائیو

2019-06-04

ساقیا عید ہے، لا بادے سے مینا بھر کے کہ مے آشام پی…

ساقیا عید ہے، لا بادے سے مینا بھر کے کہ مے آشام پیاسے ہیں مہینا بھر کے آشناؤں سے اگر ایسے ہی بے زار ہو تُم تو ڈبو دو انہیں دریا میں سفینا بھر کے عقدِ پرویں ہے کہ اس حقۂ پرویں میں مَلَک لاتے ہیں اُس رخِ روشن سے پسینا بھر کے دل ہے، آئینہ…

اندھیرے میں بھی وہ سیمیں بدن ایسا دمکتا تھا میں …

اندھیرے میں بھی وہ سیمیں بدن ایسا دمکتا تھا میں اس کی روشنی میں ساری دنیا دیکھ سکتا تھا میں اس تصویر کو تکتے ہوئے تصویر بن جاتا مری پلکیں جھپکتی تھیں نہ میرا دل دھڑکتا تھا جہاں وہ پاؤں رکھتا تھا وہاں پر پھول کھل جاتے وہاں…

"نویدِ ھِجر” یورشِ درد نہیں ، شورشِ جذبات نہیں دل…

"نویدِ ھِجر" یورشِ درد نہیں ، شورشِ جذبات نہیں دل میں اندیشے نہیں ، لَب پہ مناجات نہیں گِلہء دھر نہیں ، شکوہء حالات نہیں ھجر کی رات میں ، پہلی سی کوئی بات نہیں اپنی کم مائیگی عزم کا بخشا ھُوا سَم میں نے لَوٹا دیا مانگا ھُوا احساسِ اَلم…

جب تلک دَم رھا ھے آنکھوں میں ایک عالَم رھا ھے آنکھ…

جب تلک دَم رھا ھے آنکھوں میں ایک عالَم رھا ھے آنکھوں میں گریہ پیہم رھا ھے آنکھوں میں رات بھر نَم رھا ھے آنکھوں میں اُس گُلِ تر کی یاد میں تا صُبح رقصِ شبنم رھا ھے آنکھوں میں صُبحِ رُخصت ابھی نہیں بُھولی وہ سماں رَم رھا ھے آنکھوں میں…

زمانہ چاھيے تھا تمہیں کیا چاھيے تھا ؟ یہ میرا دل …

زمانہ چاھيے تھا تمہیں کیا چاھيے تھا ؟ یہ میرا دل ھے لڑکی کھلونا چاھيے تھا۔ میں تمہارا ھُوں اَزل سے بھروسہ چاھيے تھا یہ کیسا غم ھے جس کا مداوا چاھيے تھا ؟ بچھڑنے والے تُجھ کو بہانہ چاھيے تھا۔ ”نامعلوم“ بشکریہ…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…