ڈیلی آرکائیو

2019-07-01

داغؔ دہلوی غیر کے نام سے پیغامِ وِصال اچھّا ہے …

داغؔ دہلوی غیر کے نام سے پیغامِ وِصال اچھّا ہے چھیڑ کا جِس میں مَزا ہو، وہ سوال اچھّا ہے کبھی کہتا ہُوں، محبّت کا مآل اچھّا ہے کبھی کہتا ہُوں جو، اب ہے وہی حال اچھّا ہے یہ بھی کہتے ہو کہ، بے چَین کِیا کِس نے تجھے؟ یہ بھی کہتے…

چاہت میں کیا دنیا داری، عشق میں کیسی مجبوری – محسن…

چاہت میں کیا دنیا داری، عشق میں کیسی مجبوری - محسن بھوپالی چاہت میں کیا دنیا داری، عشق میں کیسی مجبوری لوگوں کا کیا، سمجھانے دو، ان کی اپنی مجبوری میں نے دل کی بات رکھی اور تونے دنیا والوں کی میری عرض بھی مجبوری تھی ان کا حکم بھی مجبوری…

پِھر ساوَن رُت کی پَوَن چلی تُم یاد آئے پِھر پتّوں…

پِھر ساوَن رُت کی پَوَن چلی تُم یاد آئے پِھر پتّوں کی پازیب بجی تُم یاد آئے پِھر کُونجیں بولِیں گھاس کے ہرے سَمَندر میں رُت آئی پِیلے پُھولوں کی تُم یاد آئے پِھر کاگا بولا گھر کے سُونے آنگن میں پِھر اَمرَت رَس کی بُوند پڑی تُم یاد آئے…