ڈیلی آرکائیو

2019-07-03

مِرزا اسداللہ خاں غالبؔ حُسنِ مہ گرچہ بہ ہنگامِ ک…

مِرزا اسداللہ خاں غالبؔ حُسنِ مہ گرچہ بہ ہنگامِ کمال اچّھا ہے اُس سے میرا مہِ خُرشید جمال اچّھا ہے بَوسہ دیتے نہیں، اور دِل پہ ہے ہر لحظہ نِگاہ جی میں کہتے ہیں کہ، مفت آئے تو مال اچّھا ہے اور بازار سے لے آئے، اگر ٹُوٹ گیا ساغرِ جَم سے…

در پردہ شکایت ز تو داریم و بیاں ہیچ زخمِ دلِ ما جم…

در پردہ شکایت ز تو داریم و بیاں ہیچ زخمِ دلِ ما جملہ دہان است و زباں ہیچ ترجمہ: ہمیں تجھ سے درپردہ شکایت ہے جو لفظوں میں بیان نہیں ہوتی۔ ہمارے دل کا زخم پوری طرح دہن ہےیعنی منہ کی طرح کھلا ہے لیکن اس میں زبان نہیں ہے۔ یعنی زخمِ دل سے…

ایک زمین شکیلؔ بدایونی سیّد مبارک شاہ ۔۔۔۔۔ شکیل ب…

ایک زمین شکیلؔ بدایونی سیّد مبارک شاہ ۔۔۔۔۔ شکیل بدایونی مِرے ہم نَفَس مِرے ہم نَوا مُجھے دوست بن کے دغا نہ دے مَیں ہُوں دَردِ عِشق سے جاں بَہ لَب مُجھے زِندَگی کی دُعا نہ دے مِرے داغِ دِل سے ہے روشنی اِسی روشنی سے ہے زِندَگی مُجھے ڈر…