ڈیلی آرکائیو

2019-08-14

عقیل دانش کا یومِ پیدائش July 15, 1940 اس مریض غم…

عقیل دانش کا یومِ پیدائش July 15, 1940 اس مریض غم غربت کو سنبھالا دے دو ذہن تاریک کو یادوں کا اجالا دے دو ہم ہیں وہ لوگ کہ بے قوم وطن کہلائے ہم کو جینے کے لئے کوئی حوالہ دے دو میں بھی سچ کہتا ہوں اس جرم میں دنیا والو میرے ہاتھوں میں…

کچھ پتہ انکو چلے ہم پہ گزرتی کیا ہے اپنے اک آ دھ س…

کچھ پتہ انکو چلے ہم پہ گزرتی کیا ہے اپنے اک آ دھ سہی غم کا خلاصہ لکھیں دل سے مجبور ہیں جاوید مگر حیف کہاں کیا یہ ممکن ہے کبھی آ پ کو اپنا لکھیں .. دکن کے نامور محقق. نقاد. شاعر. ادیب. صحافی و دانشور پروفیسر سلیمان اطہر جاوید کا یومِ وفات…

وطن کے لیے . گھر میں رہنا ہے تو آؤ سارے مل جُل کر …

وطن کے لیے . گھر میں رہنا ہے تو آؤ سارے مل جُل کر رہیں آسماں پر دیکھو جیسے تارے مِل جُل کر رہیں ایسے ہم یک جان ہوں جیسے پہاڑوں پر چنار جیسے قطرے آب کے مِل کر بنائیں آبشار جیسے دریا میں ندی کے دھارے مِل جُل کر رہیں آسماں پر دیکھو جیسے تارے…

اٹھو وطن کے باسیو . اٹھو کہ وقت آگیا اُٹھو کہ زند …

اٹھو وطن کے باسیو . اٹھو کہ وقت آگیا اُٹھو کہ زند گی پہ اب عزاب سخت آگیا اٹھو کہ وقت آگیا یہ حکمراں ، یہ بازی گر کریں گے ھم کو دربدر یہ تاجران رنج و غم قلم کریں گے ہر وہ سر کہ جس پہ ان کو شک ھوا، ھے سر بلند و دیدہ ور آٹھو کہ سیاہ ابر سارے…

ہم سب ہیں لہریں کِنارہ پاکستان ہے آنکھوں کا روشن س…

ہم سب ہیں لہریں کِنارہ پاکستان ہے آنکھوں کا روشن سِتارہ پاکستان ہے اِک سُورَج کی ہم ہیں کِرنیں پُھول ہیں سارے ایک چَمَن کے اپنے دیس کے مالِک بھی ہیں نوکر بھی ہیں اپنے وطن کے سب کے دِلوں کا سہارا پاکستان ہے ہم سب ہیں لہریں کنارہ پاکستان…

میرے وطن کے اداس لوگو . نہ خود کو اتنا حقیر سمجھو …

میرے وطن کے اداس لوگو . نہ خود کو اتنا حقیر سمجھو کہ کوئی تم سے حساب مانگے خواہشوں کی کتاب مانگے نہ خود کو اتنا قلیل سمجھو . نہ خود کو اتنا حقیر سمجھو کہ کوئی اٹھ کے کہے یہ تم سے وفائیں اپنی ہمیں لوٹا دو وطن کو اپنے ہمیں تھما دو . اٹھو…

آج کا آخری ملی نغمہ جسے استاد امانت علی خان نے گای…

آج کا آخری ملی نغمہ جسے استاد امانت علی خان نے گایا اور ساقی جاوید کی خوبصُورت شاعری۔ چاند میری زمیں ، پُھول میرا وطن میرے کھیتوں کی مٹی میں ، لعلِ یمن میرے ملاح لہروں کے پالے ھُوئے میرے دَھقاں پسینوں کے ڈھالے ھُوئے میرے مزدور اِس دور…

مناجات . خدا کرے کہ میری ارض پاک پر اترے وہ فصلِ گ…

مناجات . خدا کرے کہ میری ارض پاک پر اترے وہ فصلِ گل جسے اندیشۂ زوال نہ ہو . یہاں جو پھول کھلے وہ کھِلا رہے برسوں یہاں خزاں کو گزرنے کی بھی مجال نہ ہو . یہاں جو سبزہ اُگے وہ ہمیشہ سبز رہے اور ایسا سبز کہ جس کی کوئی مثال نہ ہو . گھنی…

اے مری ارضِ وطن!​ ​ ​اے مری ارضِ وطن، پھر تری دہلی…

اے مری ارضِ وطن!​ ​ ​اے مری ارضِ وطن، پھر تری دہلیز پہ میں​ یوں نگوں سار کھڑا ہوں کوئی مجرم جیسے​ آنکھ بے اشک ہے برسے ہوئے بادل کی طرح​ ذہن بے رنگ ہے اجڑا ہوا موسم جیسے​ سانس لیتے ہوئے اس طرح لرز جاتا ہوں​ اپنے ہی ظلم سے کانپ اٹھتا ہے…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…