ڈیلی آرکائیو

2019-08-19

کچھ حقیقت تو ہوا کرتی تھی انسانوں میں وہ بھی باقی …

کچھ حقیقت تو ہوا کرتی تھی انسانوں میں وہ بھی باقی نہیں رہی اس دور کے انسانوں میں سعید احمد اختر کا یومِ وفات Aug 20, 2013 نامور شاعر اور ادیب سعید احمد اختر 3 مارچ 1933 کو پشین میں پیدا ہوئے تھے ، وہ محکمہ تعلیم اور سول سروس سے وابستہ…

نظم – اردو زباں یہ کیسا عشق ہے اردو زباں کا مزا گھ…

نظم - اردو زباں یہ کیسا عشق ہے اردو زباں کا مزا گھلتا ہے لفظوں کا زباں پر کہ جیسے پان میں مہنگا قوام گھلتا ہے نشہ آتا ہے اردو بولنے میں گلوری کی طرح ہیں منہ لگی سب اصطلاحیں لطف دیتی ہیں حلق چھوتی ہے اردو تو حلق سے جیسے مئے کا گھونٹ اترتا…

سارے جہاں کا درد ہمارے جگر میں ہے—(امیر مینائی) …

سارے جہاں کا درد ہمارے جگر میں ہے---(امیر مینائی) ہو دردِ عشق ایک جگہ تو دوا کروں دل میں، جگر میں، سینے میں، پہلو میں، سر میں ہے صیّاد سے سوال رہائی کا کیا کروں اُڑنے کا حوصلہ ہی نہیں بال و پر میں ہے قاصد کو ہاتھ داغ کے بھیجا ہے یار نے…

سارے جہاں کا درد ہمارے جگر میں ہے رنجور عظیم آبادی…

سارے جہاں کا درد ہمارے جگر میں ہے رنجور عظیم آبادی سودائے سجدہ شام و سحر میرے سر میں ہے اے بت کشش کچھ ایسی ترے سنگ در میں ہے میں کب ہوں یہ مرا تن بے جاں حضر میں ہے روح روان قالب تن تو سفر میں ہے یہ ایک اثر تو ادویۂ چارہ گر میں ہے شدت اب…

میر نواز علی ناز علی کے عشق میں ہے موت زیست کا حا…

میر نواز علی ناز علی کے عشق میں ہے موت زیست کا حاصل یہ نقد شوق وہ ہے ناز کو ہے جس پر ناز ... ہاتھ کیا ہوں ترے پابندِ حنا میرے بعد کونِ ناحق میں رہا کچھ نہ رہا مزا میرے بعد .... اک بُت خود آشنا پر جان دے بیٹھیں ہیں نازؔ ہم نے پھوڑا ہے…

جس کو ہے داغ جگر اُس کو نہیں آرام دل عشق میں پکا …

جس کو ہے داغ جگر اُس کو نہیں آرام دل عشق میں پکا نہیں وہ بے خبر ہے خام دل حمل فقیر لغاری .... قلمی نام حمل لغاری اصل نام حمل خان لغاری والد کا نام رحیم داد لغاری ہے۔ انہیں حمل فقیر لغاری سے بھی پہچانا جاتا ہے۔ اردو، سرائیکی اور سندھی کے…

آپ نے کبھی لتا رفیع کا پنجابی گیت سنا ھے۔؟؟ اگر نہ…

آپ نے کبھی لتا رفیع کا پنجابی گیت سنا ھے۔؟؟ اگر نہیں سُنا تو یہ گیت آپ کی نذر کرتا ھُوں۔ رفیع کی پنجاب اور اپنی مادری زبان پنجابی سے محبت کا یہ عالم تھا کہ وہ پنجابی گانوں کا معاوضہ نہیں لیتے تھے۔ سنہ 61 میں بنی پنجابی فلم ”گُڈی“ کا یہ…

میری میراث میری لہو میں جو توریت کا ترنّم ہے مری …

میری میراث میری لہو میں جو توریت کا ترنّم ہے مری رگوں میں جو ہے زمزمہ، زبور کا ہے یہ سب یہود و نصاریٰ کے خوں کی لہریں ہیں مچل رہی ہیں جو میرے لہو کی گنگا میں میں سانس لیتا ہوں جن پھیپھڑوں کی جنبش سے کسی مغنّئ آتش نفس نے بخشے ہیں جواں ہے…

صبح کے درد کو راتوں کی جلن کو بھولیں کس کے گھر جا…

صبح کے درد کو راتوں کی جلن کو بھولیں کس کے گھر جائیں کہ اس وعدہ شکن کو بھولیں آج تک چوٹ دبائے نہیں دبتی دل کی کس طرح اس صنم سنگ بدن کو بھولیں اب سوا اس کے مداوائے غم دل کیا ہے اتنی پی جائیں کہ ہر رنج و محن کو بھولیں اور تہذیب غم عشق…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…